پانی پت کی تیسری لڑائی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
پانی پت کی تیسری لڑائی
The Third battle of Panipat 13 January 1761.jpg
The Third Battle of Panipat, 14 جنوری 1761, Hafiz Rahmat Khan, standing right of احمد شاہ ابدالی، who is shown sitting on a brown horse.
تاریخ14 جنوری 1761
مقامپانی پت
(in present-day ہریانہ، بھارت)

29°23′N 76°58′E / 29.39°N 76.97°E / 29.39; 76.97
نتیجہ Durrani victory[1]
سرحدی
تبدیلیاں
Marathas lost suzerainty over Punjab above north of دریائے ستلج river to the Durranis.
محارب
Flag of Herat until 1842.svg درانی سلطنت
Supported by:
Flag of the Rampur State.svg روہیلہ
Flag of Awadh.svg ریاست اودھ
Flag of the Mughal Empire (triangular).svg مغلیہ سلطنت
Flag of the Maratha Empire.svg مرہٹہ سلطنت
کمانڈر اور رہنما

Flag of Herat until 1842.svg احمد شاہ ابدالی
Afghan Officers:
Flag of Herat until 1842.svg تیمور شاہ درانی
Flag of Herat until 1842.svg Mian Ghulam Shah Kalhoro
Flag of Herat until 1842.svg Wazir Wali Khan[1]
Flag of Herat until 1842.svg Shah Pasand Khan[1]
Flag of Herat until 1842.svg Barkhurdar Khan[2]
Flag of Herat until 1842.svg Jahan Khan[1]
Flag of Herat until 1842.svg Wazirullah Khan[2]
Rohilla, Oudh and Mughal Officers:
Flag of Awadh.svg شجاع الدولہ[3]
Flag of the Rampur State.svg نجيب الدولہ[4]
Flag of the Mughal Empire (triangular).svg Amir Beg[2]
Flag of the Mughal Empire (triangular).svg Zain Khan Sirhindi
Flag of the Mughal Empire (triangular).svg Murad Khan[2]
Flag of the Mughal Empire (triangular).svg Shuja Quli Khan
Flag of the Rampur State.svg Hafiz Rahmat Khan[1]
Flag of the Rampur State.svg Dundi Khan[1]
Flag of the Mughal Empire (triangular).svg Banghas Khan[1]
Flag of the Mughal Empire (triangular).svg Nasir Khan Baluch[2]

Flag of the Mughal Empire (triangular).svg Nawab Ahmad Khan Bangash of Farrukhabad[2]

Flag of the Maratha Empire.svg سداشو راؤ بھاؤ 
Maratha Officers:
Flag of the Maratha Empire.svg Vishwasrao Bhatt 
Flag of the Maratha Empire.svg Malharrao Holkar
Flag of the Maratha Empire.svg Mahadji Shinde (زخمی)
Flag of the Maratha Empire.svg Ranoji Bhoite  (زخمی)
Flag of the Maratha Empire.svg ابراہیم گاردی 
Flag of the Maratha Empire.svg Jankoji Shinde (جنگی قیدی)
Flag of the Maratha Empire.svg شمشیر بہادر اول  (زخموں سے متوفی)
Flag of the Maratha Empire.svg Damaji Gaikwad
Flag of the Maratha Empire.svg Tukoji Rao Shinde 
Flag of the Maratha Empire.svg Yashwant Rao Pawar  
Flag of the Maratha Empire.svg Shri. Arvandekar  
Flag of the Maratha Empire.svg Sidoji Gharge

Flag of the Maratha Empire.svg Vitthal Vinchurkar
طاقت

Flag of Herat until 1842.svg 41,800 Afghan رسالہ (عسکریہ) of which 28,000 was regular cavalry[5]

Flag of the Rampur State.svg Flag of Awadh.svg Flag of the Mughal Empire (triangular).svg 32,000 Rohilla infantry[5] (out of which 20,000 were from Flag of Awadh.svg ریاست اودھ

Flag of the Maratha Empire.svg 55,000 Maratha رسالہ (عسکریہ) of which 11,000 was regular cavalry [5]

9,000 Gardi Infantry[5]

The force was accompanied by 200,000 non-combatants (pilgrims and camp-followers)۔[6]
ہلاکتیں اور نقصانات

Flag of the Rampur State.svg Flag of Awadh.svg Flag of the Mughal Empire (triangular).svg 15,000 Rohillas killed

Flag of Herat until 1842.svg 5,000 Afghans killed.[5]

Flag of the Maratha Empire.svg 30,000 killed in battle[5]

10,000 killed while retreating.[5]

10,000 reported missing.[5]

Another 40,000–70,000 non-combatants executed following the battle.[7][8]

پانی پت کی تیسری لڑائی 14 جنوری 1761ء کو دہلی سے 97 کلو میٹر (60 میل) شمال میں واقع پانی پت کے مقام پر مرہٹہ سلطنت اور احمد شاہ ابدالی کی افغانی فوج سے ہوئی۔ روہیلہ، نجيب الدولہ، دوآب کے افغان اور اودھ کے نواب شجاع الدولہ نے ابدالی کا ساتھ دیا۔ مرہٹہ فوج کی قیادت چھترپتی کے تیسرے پیشوا اور وزیر اعظم سداشو راؤ بھاؤ نے کی۔ مرہٹہ کی مرکزی فوج اپنے پیشوا کے ساتھ سطح مرتفع دکن میں تھی۔

ایک جانب مراٹھا تھے جن کے پاس بہترین توپ خانے اور رسالے تھے تو وہیں دوسری جانب بھاری بھرکم توپ خانوں اور سواروں سے لیس ابدالی اور نجيب الدولہ سے قیادت والی افغان فوج۔ یہ جنگ 18ویں صدی سے سب سے بڑی جنگ مانی جاتی ہے[9] اور ایک ہی دن اموات کے اعتبار سے بھی یہ سب سے بڑی جنگ ہے۔ اس دوران میں کئی واقعات رونما ہوئے اور نئی تاریخیں بنیں۔ مورخین جنگ کے اصل مقام کو لے کر باہم اختلاف میں ہیں مگر اکثر کا اتفاق ہے کہ 1جنگ موجودہ کالا آمب اور سنولی روڈ کے درمیان میں واقع ہوئی ہوگی۔ جنگ کئی دنوں تک چلی جس میں کل 125,000 فوجیوں نے حصہ لیا۔ دونوں جانب سے نفع و نقصان ہوا مگر ابدالی کی فوج فاتح قرار پائی۔ انہوں نے کئی مراٹھا ٹکڑیوں کو تباہ کر دیا تھا۔ مورخین جانبین سے نقصان اور اموات کو لے کر اختلاف رائے رکھتے ہیں مگر ایک اندازہ کے مطابق 60,000–70,000 جانیں گئیں اور کئی زخمی ہوئے اور قیدی بنا لیے گئے۔ جنگ کے واحد معتبر چشم دید، شجاع الدولہ کے دیوان کاشی راج کے مطابق جنگ ختم ہونے کے اگلے دن مرہٹہ سلطنت کے 40 ہزار فوجیوں کو آسان موت دے دی گئی۔[8]

گرانٹ ڈف نے تاریخ مراٹھا میں ایک چشم دید کا انٹرویو چھاپا ہے اور ان نمبرات کی تصدیق کرتے ہیں۔ مونوگراف پانی پت 1761ء کو اس واقعہ کے سب سے بہترین ماخذ کے طور پر جانا جاتا ہے، اس کے مطابق “جنگ کے دوران میں اور بعد میں کم از کم 100,000 مراٹھا جاں بحق ہوئے۔“[7]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ ت ٹ ث ج Kaushik Roy, India's Historic Battles: From Alexander the Great to Kargil، (Orient Longman, 2004)، 90.
  2. ^ ا ب پ ت ٹ ث Sharma، Suresh K. (2006). Haryana: Past and Present. ISBN 9788183240468. 
  3. Kulke، Hermann؛ Rothermund، Dietmar (2004). A History of India. ISBN 978-0-415-32919-4. 
  4. History. ISBN 9788187139690. 
  5. ^ ا ب پ ت ٹ ث ج چ Roy، Kaushik (2004). India's Historic Battles: From Alexander the Great to Kargil. صفحات 84–85–93. ISBN 9788178241098. 
  6. "Third Battle of Panipat (1761) | Panipat, Haryana". 
  7. ^ ا ب James Grant Duff "History of the Mahrattas, Vol II (Ch. 5)، Printed for Longman, Rees, Orme, Brown, and Green, 1826"
  8. ^ ا ب T. S. Shejwalkar, "Panipat 1761" (in Marathi and English) Deccan College Monograph Series. I.، Pune (1946)
  9. Black، Jeremy (2002). Warfare In The Eighteenth Century. Cassell. ISBN 978-0-304-36212-7. 

مزید دیکھیے[ترمیم]