وفد سلامان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

وفد سلامان شوال 10ھ میں بارگاہ رسالت میں حاضر ہوا
یہ قبیلہ اپنے جد اعلیٰ سلامان ابن سعد بن زید بن لوث بن سود بن اسلم بن حاف قضاعہ کی طرف منسوب ہے اور یہ قضاعہ کی ذیلی شاخ ہے اس میں 7 اشخاص تھے انہی میں سے ایک حبیب بن عمرو بھی تھے جنہوں نے سوال کیا سب اعمال سے افضل کیا چیز ہے رسول اللہصلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے فرمایا وقت پر نماز پڑھنا انہوں نے کہا ہمارے علاقے میں بارش نہیں ہوئی دعا فرمائیں آپ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلمنے فرمایا اللَّهُمَّ اسْقِهِمُ الْغَيْثَ فِي دَارِهِمْ حبیب نے عرض کی اپنے مبارک ہاتھوں کو اٹھا کر دعا کریں آپ مسکرائے اور ہاتھ اٹھا کر دعا کر دی جب وفد اپنے وطن واپس لوٹا تو معلوم ہوا ٹھیک اسی دن بارش ہوئی جس دن آپ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے دعا فرمائی[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. المواہب اللدنیہ، جلد اول، صفحہ 676، فرید بکسٹال لاہور