کیلاکرئی جامع مسجد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
பழைய ஜும்மா பள்ளி
کیلاکرئی جامع مسجد
Palaiya Jumma Palli.jpg
کیلاکرئی کی قدیم جامع مسجد
بنیادی معلومات
مقام کیلاکرئی، تمل ناڈو، بھارت
متناسقات 9°13′53″N 78°47′04″E / 9.2314°N 78.7844°E / 9.2314; 78.7844متناسقات: 9°13′53″N 78°47′04″E / 9.2314°N 78.7844°E / 9.2314; 78.7844
مذہبی انتساب اسلام
ریاست تمل ناڈو
علاقہ کیلاکرئی
ملک بھارت
تعمیراتی تفصیلات
معمار باذان بن ساسان
نوعیتِ تعمیر مسجد
طرز تعمیر دراوڑی اسلامی طرز تعمیر
سنہ تکمیل 628-630 CE

کیلاکرئی جامع مسجد (تمل: பழைய ஜும்மா பள்ளி) یا مین کڈئی مسجد (تمل: மீன் கடை பள்ளி) بھارتی ریاست تمل ناڈو کے شہر کیلاکرئی میں واقع ایک پرانی جامع مسجد ہے جسے سنہ 628ء اور 630ء کے درمیان میں تعمیر کیا گیا تھا۔ خیال ہے کہ یہ اور کیرالا کی چیرامن مسجد دنیا کی قدیم ترین مسجدوں میں سے ہیں۔[1][2] اس کی اسی قدامت کی وجہ سے یہ مسجد مقامی زبان تمل میں "پلائیا جمعہ مسجد" یعنی پرانی جامع مسجد کے نام سے معروف ہے۔ اس کی تعمیر سنہ 628ء اور 630ء کے درمیانی عرصے میں ہوئی اور 1036ء میں دوبارہ تعمیر کی گئی۔ مسجد اور شہر میں موجود دوسری عمارتیں دراوڑی اسلامی طرز تعمیر کا بہترین نمونہ ہیں۔[3]

تاریخ اور تعمیر[ترمیم]

محمد صلی اللہ علیہ وسلم کے زمانے میں یمن کے گورنر باذان بن ساسان کی فرمائش پر پانڈیا سلطنت کے دور میں یمنی تاجروں کے ہاتھوں اس مسجد کی تعمیر ہوئی۔ گیارہویں صدی عیسوی میں جنگ شہید کے بعد اس مسجد کو دوبارہ تعمیر کیا گیا۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Gibb & Beckingham 1994, pp. 814–815 Vol. 4.
  2. Krishna, Nanditha۔ "KILAKARAI-THE OLDEST MOSQUE IN INDIA"۔ Heritageonlinefoundation۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 7 مارچ 2015ء۔
  3. "Documentary on Tamil Muslims inspires approach to Tamil national struggle"۔ TamilNet۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 فروری 2015ء۔