قطب الدین بختیار کاکی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

قطب الاقطاب حضرت خواجہ سیّد محمد قطب الدین بختیار کاکی دہلوی بّرصغیر کے عظیم صوفی بزرگ، سُلطان الہند خواجہ معین الدین چشتی اجمیری کے خلیفہ اور شیخ العالم حضرت بابا فرید الدین گنج شکر کے پیر و مرشد ہیں۔ آپ نے 1187ء میں آنکھ کھولی اور 1236ء میں معبودِ حقیقی سے وصال ہوگیا۔

حضرت قطب کا اسمِ گرامی بختیار، لقب قطب الدین اور کاکی عرفیت ہے۔ آپ قصبہ اوش ترکستان میں پیدا ہوئے۔ حسینی سادات میں سے تھے۔ لڑکپن ہی میں بغداد آگئے اور خواجہ معین الدین چشتی سے بیعت کی۔ سترہ برس کی عمر میں خواجہ صاحب سے خرقہ خلافت پایا۔ کچھ عرصے بعد اپنے پیرو مرشد کی معیت میں ہندوستان تشریف لائے اور دہلی میں قیام فرمایا۔ آپ بابا فرید الدین گنج شکر کے مرشد تھے۔ آپ کی طرف دو کتابیں منسوب کی جاتی ہیں۔ ایک دیوان ہے اور دوسری فوائد السالکین جو تصوف کے موضوع پر ہے۔ سماع سے بہت رغبت تھی۔ دہلی میں ایک محفل سماع کے دوران حضرت احمد جام کے شعرمحفل سماع میں ایک شعر

کُشتگانِ خنجرِ تسلیم را

ہر زماں از غیب جانِ دیگر اَست

سن کر وجد طاری ہوا وہ تین روزاسی وجد میں رہے آخر 27 نومبر 1235ء کو انتقال فرماگئے۔ نماز جنازہ التتمش نے پڑھائی۔ آپ کا مزار دہلی کے علاقے مہرولی میں ہے۔

نگار خانہ[ترمیم]