دیوبندی مکتب فکر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(دیو بندی سے رجوع مکرر)
Jump to navigation Jump to search
دیوبندیت
دار العلوم دیوبند، بھارت

مذہب اسلام
بانی محمد قاسم نانوتوی
رشید احمد گنگوہی
سید عابد حسین
مقام ابتدا دیوبند
تاریخ ابتدا 1866ء
ابتدا اہل سنت سے

دیوبندی مکتب فکر اہل سنت کا ایک مکتب فکر ہے جس کے پیروکار ہندوانہ رسم و رواج سے دور اور شاہ ولی اللہ محدث دہلوی نے اہل سنت کے مسلک کی جو تشریح کی ہے اسی پر عامل ہیں۔ علمائے دیوبند بالواسطہ شاہ ولی اللہ محدث دہلوی کے شاگرد سمجھے جاتے ہیں۔

دیوبندی علما نے اہل سنت کے مسلمہ عقائد و اصول میں کوئی حذف و اضافہ نہیں کیا اور نہ ہی کوئی نئی تشریح وضع کی جو اہل سنت سے علاحدہ ہو۔ بلکہ وہ عقیدہ میں اہل سنت کے مطابق تفویض و تاویل کو حق مانتے ہیں۔ عموماً دیوبندی مکتب فکر کے منتسبین ماتریدی ہوتے ہیں، لیکن ساتھ ہی اشعری و حنابلہ (غیر مجسمہ) کو برحق سمجھتے ہیں۔

خاص پہچان

دیوبندی نبی کو فقط بشر مانتے ہیں۔ اور مسئلہ حیات النبی پر یہ دو گروہوں (حیاتی و مماتی) میں منقسم ہیں۔ خصوصاّ یہ مکتب فکر عیدِ میلاد النبی صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کے تہوار کو منانے کے حق میں نہیں اور اسی طرح محافلِ درود و سلام اور گیارہویں شریف کے بارے میں بھی اختلافِ رائے رکھتے ہیں۔ اسی طرح سے عقیدہِ توسل، زیاراتِ مزارات اور عقیدہِ شاہد و ناظر کو شرک گردانتے ہیں۔

دیوبندی مکتب فکر عقائد و اعمال میں سید احمد بریلوی، شاہ اسماعیل دہلوی کی تقلید و تعظیم کرتے ہیں۔

فقہ

زیادہ تر دیوبندی علما حنفی المسلک ہیں، لیکن بقیہ تینوں فقہی مکاتب فکر یعنی مالکیہ، شافعیہ اور حنابلہ کو بھی برحق تسلیم کرتے ہیں۔

حوالہ جات

  1. Muslim Schools and Education in Europe and South Africa۔ Waxmann۔ 2011۔ صفحات 85ff۔ اخذ کردہ بتاریخ 29 اپریل 2013۔