جلیل قدوائی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
جلیل قدوائی
پیدائش جلیل احمد قدوائی
23 دسمبر 1904(1904-12-23)ء
اناؤ، اترپردیش، برطانوی ہندوستان
وفات 1 فروری 1996(1996-02-01)ء
راولپنڈی، پاکستان
آخری آرام گاہ کراچی، پاکستان
قلمی نام جلیل قدوائی
پیشہ شاعر، نقاد، محقق، مترجم، صحافی ، افسانہ نگار
زبان اردو
نسل مہاجر
شہریت Flag of پاکستانپاکستانی
اصناف شاعری، تحقیق، تنقید، افسانہ، صحافت، ترجمہ
نمایاں کام چند اکابر ، چند معاصر
سیر گل
حیات مستعار
نقش و نگار
انتخاب شعرائے بدنام

جلیل قدوائی (پیدائش: 23 دسمبر، 1904ء - وفات: یکم فروری، 1996ء) اردو کے ممتاز نقاد، محقق، شاعر،مترجم، صحافی اور افسانہ نگار تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

جلیل قدوائی 23 دسمبر، 1904ء کو اناؤ، اترپردیش، برطانوی ہندوستان میں پیدا ہوئے[1][2][3]۔ وہ بیک وقت شاعر، افسانہ نگار، محقق، بلند پایہ نقاد، مترجم اور صحافی تھے۔ ان کی کتب میں گلدستہ تنقید، چند اکابر، چند معاصر، قطرات شبنم، مکتوباتِ عبد الحق، تذکرے اور تبصرے، خاکسترپروانہ (شاعری)، حیات مستعار (خودنوشت)، نقش و نگار (شاعری)، نوائے سینہ تاب (شاعری)، انتخاب شعرائے بدنام اور سیر گل (افسانہ) سرِ فہرست ہیں۔[3]

تصانیف[ترمیم]

  • چند اکابر، چند معاصر
  • گلدستہ تنقید (تنقید)
  • تذکرے اور تبصرے (تنقید)
  • قطرات شبنم
  • مکتوباتِ عبد الحق (ترتیب)
  • خاکسترپروانہ (شاعری)
  • نقش و نگار (شاعری)
  • نوائے سینہ تاب (شاعری)
  • انتخاب شعرائے بدنام (انتخاب)
  • تنقیدیں اور خاکے (تنقید)
  • حیات مستعار (خودنوشت)
  • دیوان بیدار (ترتیب)
  • انتخاب حسرت (انتخاب)
  • سیر گل (افسانہ)
  • اصنام خیالی (12 مختصر افسانے)
  • مانا دانا (ڈراما، ترجمہ)
  • ماموں جان (ڈراما، ترجمہ)
  • حسنِ انتخاب
  • کارنامۂ ادب
  • تجزیے اور تجربے (تنقید)
  • کلامِ غالب (نسخۂ قدوائی) (غالبیات)

وفات[ترمیم]

جلیل قدوائی یکم فروری، 1996ء کو راولپنڈی، پاکستان میں وفات پا گئے۔ وہ کراچی میں سپردِ خاک ہوئے۔[2][3][1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب ڈاکٹر محمد منیر احمد سلیچ، وفیات ناموران پاکستان، اردو سائنس بورڈ لاہور، 2006ء، ص 236
  2. ^ ا ب جلیل قدوائی، سوانح و تصانیف ویب، پاکستان
  3. ^ ا ب پ پاکستان کرونیکل، عقیل عباس جعفری، ورثہ / فضلی سنز، کراچی، 2010ء، ص 776