اسد گل زادہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اسد گل زادہ
Gulzoda asad.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1935 (عمر 86–87 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ ماہرِ لسانیات  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
P literature.svg باب ادب
اسد گلزادہ

اسد گلوف ، جسے اسد گلزادئی بخاروی یا اسد گلزادہ بھی کہا جاتا ہے ( تاجک: Асад Гулзодаи Бухороӣ‎ ) ایک تاجک شاعر ، ماہر لسانیات اور صحافی ہیں۔

زندگی[ترمیم]

اسد گلزادہ 1935 میں ازبکستان کے علاقے بخارا ریجن ، پشکو ضلع کے شاگون گاؤں میں پیدا ہوئے تھے۔ انہوں نے اپنی ثانوی تعلیم اسی جگہ حاصل کی۔ 1958 میں انہوں نے تاجک زبان و ادب کے شعبہ ، دوشنبہ یونیورسٹی سے گریجویشن کیا۔ اس کا اگلا کام اور سرگرمی بخارا علاقے کی ریاستی نشریاتی کمپنی میں درس و صحافت سے وابستہ ہے۔ [1]

اسد گل زادہ جوانی میں ہی شاعری میں گیا تھا۔ ان کی نظمیں ازبکستان اور تاجکستان کے اخبارات میں شائع ہوتی تھیں۔

اسد گل زادہ کے اشعار "مرغوبی چی میکو آباد" میں شائع ہوئے ؟ ، دوشنبہ کے "موریف" پبلشنگ ہاؤس میں "لیبزی شیرین" ۔ اور اس کے اشعار "کہکشانی اورزو" (تاشقند) اور "گل مراد" (دوشنبہ) کے مجموعوں میں بھی ملتے ہیں ۔ [1]

"نسیم بخارا" (بخارا ، 2001) ، "حط پیشونا" (دوشنبہ ، "سروشاں" ، 2003) کی کتابوں میں ان کی زندگی کے روشن ادوار میں لکھے گئے شعر کے کچھ بہترین اشعار جمع کیے گئے ہیں۔ [1]

2004 میں "موریف فرہنگ" دوشنبہ کے پبلشنگ ہاؤس نے نظموں کا مجموعہ "شکیفاہی بخارا" کے نام سے شائع کیا اور 2007 میں "نموزی روئی بارگ" اور " نفس بہار" کے مجموعے شائع کیے ۔

اسد گل زادہ کے اشعار میں بخارا اور اس قدیم شہر کی آبادی کی منفرد مناظر ، زندگی اور مزدوری کو بیان کیا گیا ہے۔ ان کی زیادہ تر نظمیں بچوں کے لیے وقف ہیں۔

اسد گلزادہ 2003 سے تاجکستان کی رائٹرز یونین کے ارکان ہیں۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ Qamarzoda, Asliddin. Gulistoni Adab, Sharq Publishing Company, Tashkent, 2007, آئی ایس بی این 978-9943-00-122-0.