سبطین فضلی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
سبطین فضلی
معلومات شخصیت
پیدائش 9 جولا‎ئی 1916  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بہرائچ،  اتر پردیش  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 25 جولا‎ئی 1985 (69 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لاہور،  پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدفن میانی صاحب قبرستان  ویکی ڈیٹا پر (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت (26 جنوری 1950–)
Flag of India.svg ڈومنین بھارت  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ فلم ہدایت کار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان اردو  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحات  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

سید سبطین فضلی (پیدائش: 9 جولائی،1916ء - وفات: 25 جولائی، 1985ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے بر صغیر پاک و ہند کے نامور فلمی ہدایت کار اور اردو کے مشہور معروف ناول نگار فضل احمد کریم فضلی کے بھائی تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

سبطین فضلی 9 جولائی،1916ء کو بہرائچ، اترپردیش، برطانوی ہندوستان میں پیدا ہوئے۔[1][2] انہوں نے اپنے فلمی کیریئر کا آغاز اپنے بڑے بھائی حسنین فضلی (1957ء۔1912ء) کی معاونت سے کیا تھا۔ تقسیم ہند کے بعد انہوں نے پاکستان کی کلاسیک فلم دوپٹہ کی ہدایات دیں۔ اس کے بعد انہوں نے آنکھ کا نشہ اور دو تصویریں نامی فلمیں بنائیں۔ یہ دونوں فلمیں کامیاب نہیں ہوئیں مگر ان کی صرف ایک فلم دوپٹہ ہی ان کا نام پاکستان کی فلمی تاریخ میں ہمیشہ زندہ رکھنے کے لیے کافی ہے۔[3]

مشہور فلمیں[ترمیم]

  • شمع 1946ء
  • ڈوپٹہ1952ء
  • آنکھ کا نشہ
  • دو تصوریں

وفات[ترمیم]

سبطین فضلی 25 جولائی، 1985ء کو لاہور، پاکستان میں وفات پاگئے۔ وہ لاہور میں میانی صاحب کے قبرستان میں آسودۂ خاک ہیں۔[3][4][1]

حوالہ جات[ترمیم]