نیوزی لینڈ میں اسلام

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
نیوزی لینڈ میں اسلام
IslaminNewZealandBookLaunch.jpg
کینٹبری کی ایک مسجد میں ایک مسلمان لڑکا
معلومات ملک
نام ملک Flag of New Zealand.svg نیوزی لینڈ
کل آبادی 4,374,636
ملک میں اسلام
مسلمان آبادی 36,381
فیصد 09٪

اسلام نیوزی لینڈ میں ایک نسبتًا نیا اور چھوٹا مذہبی طبقہ ہے۔

2006ء کی مردم شماری میں 72،360 سے زیادہ لوگوں نے اپنے آپ کو اس مذہت کا پیرو بتایاتھا۔

اسلام کی نیوزی لینڈ میں آمد 1870ء میں مسلم چینی سونے کی آمد کے ساتھ شروع ہوئی۔ ہندوستان سے مسلم تارکین وطن اور مشرقی یورپ کی چھوٹی چھوٹی تعداد میں 1900ء سے 1960ء کی دہائی تک آباد ہونے والے اور بڑے پیمانے پر مسلم امیگریشن 1990ء کی دہائی میں، مختلف جنگ سے تارکین وطن اور پناہ گزینوں کی آمد مسلسل مسلم آبادی کے اضافے کا سبب بنا۔

1950ء میں پہلی مسلم تنظیم نیوزی لینڈ مسلم یونین نے رجسٹرڈ حیثیت حاصل کی۔ پہلا اسلامی مرکز آکلینڈ شہر میں 1959ء میں قائم کیا گیا تھا۔ پہلی مسجد 1979ء سے 1980ء کے بیچ بنا ئ گئی تھی۔

ملک میں وسیع مسلم طبقے کی تنظیم نیوزی لینڈ کی اسلامی انجمنیں 1979 میں رجسٹرکی گئی تھی۔ اس کے پہلے منتخب قومی صدر مظہر کرسنیگی Mazhar) (Krasniqi بنیادی طور ایک البانی کوسویائ ہیں۔ انہیں 2002 میں نیوزی لینڈ کی حکومت نے ایک کویں س سروس تمغا سے نوازا تھا۔ 1982ء اور 1999ء کے بیچ مرحوم خالد حافظ ایک معمر قائد کے طور پر ابھرے تھے۔ وہ بھارت میں پیدا ہوئے تھے اور سعودی عرب کے تعلیم یافتہ تھے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  • Drury, Abdullah, Islam in New Zealand: The First Mosque (Christchurch, 2007) ISBN 978-0-473-12249-2
  • Drury, Abdullah, "A time for Muslims to examine faith" in The Nelson Mail (5 August 2008), p. 9.
  • Drury, Abdullah, "A Tribute to the Illyrian Pioneers" in Al Mujaddid (March 2002 - Muharram 1423), Vol.1, No.16, p. 10.
  • Drury, Abdullah, "Crucial element locked in past " in The New Zealand Herald (25 September 2007).
  • Drury, Abdullah, "Halal certification of growing value" in The Otago Daily Times (27 April 2007), p. 30.
  • Drury, Abdullah, "Home country doctrine splits once-unified local Muslims" in The New Zealand Herald (12 July 2006).
  • Drury, Abdullah, "Integration effort needed" in The Press (2 August 2005), p. 5.
  • Kolig, Erich, New Zealand's Muslims and Multiculturalism (2010) ISBN 978-90-04-17835-9.
  • Sheppard, William, "The Muslim Community in New Zealand", Chapter 5 in Indians in New Zealand, ed. K.N. Tiwari (Wellington, N.Z.: Price-Milburn, 1980).
  • Sheppard, William, "Muslims in New Zealand", The Journal of the Institute of Muslim Minority Affairs (Riyadh), 4/1-2 (1982): 60–81.
  • Sheppard, William, "The Islamic Contribution: Muslims in New Zealand", in Religion in New Zealand Society, Second Edition, eds Brian Colless & Peter Donovan (Palmerston North, New Zealand: Dunmore Press, 1985), pp. 181–213.
  • Sheppard, William, "Muslims in New Zealand", The Journal of the Institute of Muslim Minority Affairs (Riyadh), 16/2 (1996): 211–232. [Updates 1982 article to 1991
  • Sheppard, William, "Australia and New Zealand", authored jointly with Michael Humphrey, in Islam Outside the Arab World, eds. David Westerlund and Ingvar Svanberg, Surrey: Curzon Press, 1999, pp. 278–294.
  • Sheppard, William, "Muslims in New Zealand" in Muslim Minorities in the West: Visible and Invisible, eds., Yvonne Y. Haddad and Jane I. Smith, Walnut Creek, etc.: Altamira Press, 2002, chapter 13.
  • Sheppard, William, "New Zealand’s Muslims And Their Organisations" New Zealand Journal of Asian Studies 8, 2 (December, 2006): 8–44. (cf. "Introduction: Muslims In New Zealand" in the next section)
  • Sheppard, William, "Introduction: Muslims In New Zealand", New Zealand Journal of Asian Studies 8, 2 (December, 2006): 1–7. Co-authored with Erich Kolig.
  • Sheppard, William, "Australia and New Zealand", in The Oxford Encyclopaedia of the Modern Islamic World (New York and Oxford: Oxford University Press, 1995), Vol. 1, pp. 154–5.
  • "Sonny Bill Williams embraces Islam" in The Star, 16 February 2011, page.1.

ماخذ[ترمیم]