ابو البرکات سید احمد قادری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(ابو البرکات احمد سے رجوع مکرر)
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

شیخ الحدیث علامہ ابو البرکات سید احمد قادری 1886ء کو بھارت کے شہر الور میں سید دیدار علی شاہ کے ہاں پیدا ہوئے۔

تعلیم[ترمیم]

مدرسہ قوت الاسلام (الور ) سے صرف ونحو ، اصول ، منطق اور فلسفہ اور بعد ازاں سید محمد نعیم الدین مراد آبادی کے مدرسہ اہل سنت مراد آباد سے مختلف علوم اور فن طب میں مہارت حاصل کی۔ جامعہ نعیمیہ مراد آباد سے سند فراغت کر کے اپنے والد سید دیدار علی شاہ سے دورہ حدیث پڑھا اور احادیث کی خصوصی ا سناد و تمام سلاسل اولیاء کے معمولات وظائف کی اجازت وخلافت حاصل کی۔ 1915ء میں بریلی شریف حاضر ہوئے اور کچھ عرصہ اعلیٰ حضرت امام احمد رضا خان قادری کی خدمت میں رہے وہاں سے تمام علوم عالیہ اسلامیہ قرآن وحدیث وفقہ کی خصوصی اسناد لیں۔

عملی زندگی[ترمیم]

1920ء ابو البراکات جامع مسجد آگرہ کے خطیب ومفتی مقرر ہوئے۔1933ء میں جامع مسجد مزار داتا گنج بخش لاہور میں خطیب اور دارالعلوم حزب الاحناف میں مدرس ہوئے۔

سیاسی سرگرمیاں[ترمیم]

30 اپریل، 1946ء آل انڈیا سنی کانفرنس منعقدہ بنارس میں ہزاروں علماء اور مشائخ کے ساتھ انہوں نے پاکستان کے قیام کے حق میں دستخط کیے۔ 1949ء میں جب پہلی دستور ساز اسمبلی کے ممبر تھے۔ نظام مصطفی کے قیام و نفاذ کے لیے بھی سر گرم رہے۔ وہ 1987ء میں فوت ہوئے اور ان کو مرکزی دارالعلوم حزب الاحناف، گنج بخش روڈ میں دفن کیا گیا۔

بیرونی روابط[ترمیم]