قومی اسمبلی پاکستان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(ایوان زیریں پاکستان سے رجوع مکرر)
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
قومی اسمبلئ پاکستان
14وی قومی اسمبلی، پاکستان
125px
قسم
قسم ایوان زیریں ہائے پارلیمان پاکستان
قیادت
اسپیکر سردار آیاز صادق [1]، مسلم لیگ ن
از 3 جون 2013
ڈپٹی اسپیکر مرتضٰی جاوید عباسی[1]، PML-N
از 3 June 2013
Leader of House نواز شریف [2]، PML-N
از5 June 2013
Leader of Opposition Syed Khursheed Shah[3]، PPP
از7 June 2013
ساخت
اراکین 342

حکومت (209)
     پی ایم ایل-این (190)
     جے یو آئی-ف (13)[4]
     پی ایم ایل-ف (6)[5]
     NPP (3)[6]

حزب اختلاف (126)
     پی پی پی (46)
     پی ٹی آئی (33)
     ایم کیو ایم (24)
     پی کے ایم اے پی (8)
     جے آئی (4)
     پی ایم ایل-کیو (3)
     اے این پی (3)
     کیو ڈبلیو پی-ایس (1)
     پی ایم ایل-زیڈ (1)
     این پی (1)
     اے ایم ایل (1)
     اے جے آئی (1)
     بی این پی (1)
     اے پی ایم ایل (1)
     آزاد (8)


     Withheld/Terminated/Re-poll (6)
انتخابات
نظام رائے شماری Mixed member majoritarian (First past the post for most seats, 60 seats reserved for women and 10 seats reserved for religious minorities by proportional representation)
11 مئی 2013
مقام اجتماع
پالیمنٹ ہاؤس، اسلام آباد
ویب سائٹ
www.na.gov.pk
State emblem of Pakistan.svg
حصہ سلسلہ مضامین بہ
سیاست و حکومت
پاکستان
آئین

قومی اسمبلی پاکستان کی پارلیمان کا ایوان زیریں ہے۔ جس کی صدارت اسپیکر کرتا ہے جو صدر اور ایوان بالا سینیٹ کے چیئرمین کی عدم موجودگی میں ملک کے صدر کی حیثیت سے ذمہ داریاں انجام دیتا ہے۔ عام انتخابات میں سب سے زیادہ نشستیں حاصل کرنے والی جماعت کا سربراہ عموماً وزیر اعظم منتخب ہوتا ہے جو قائد ایوان بھی ہوتا ہے۔

پاکستان کی قومی اسمبلی کی موجودہ اسپیکر ڈاکٹر ایاز صادق ہیں جبکہ مرتضی جاوید عباسی ان کے نائب ہیں۔ قائد حزب اختلاف خورشید شاہ ہیں جن کا تعلق پاکستان پیپلز پارٹی سے ہے۔

آئین پاکستان کے مطابق قومی اسمبلی 342 نشستوں پر مشتمل ہے جس میں سے 272 نشستوں پر اراکین براہ راست انتخاب کے ذریعے منتخب ہوتے ہیں۔ علاوہ ازیں مذہبی اقلیتوں کے لیے 10 اور خواتین کے لیے 60 نشستیں بھی مخصوص ہیں، جنہیں 5 فیصد سے زائد ووٹ حاصل کرنے والی جماعتوں کے درمیان نمائندگی کے تناسب سے تقسیم کیا جاتا ہے۔ قومی اسمبلی میں خواتین کی موجودہ تعداد 72 ہے۔

قومی اسمبلی کے اراکین کثیر الجماعتی انتخابات کے ذریعے عوام کی جانب سے منتخب کیے جاتے ہیں جو پانچ سال میں منعقد ہوتے ہیں۔ آئین کے تحت قومی اسمبلی کی نشست کے لیے مقابلہ کرنے والے امیدواروں کا پاکستانی شہری ہونا 18 سال سے زائد العمر ہونا ضروری ہے۔

اختیارِ برخاستی[ترمیم]

آئین پاکستان کی شق 58 کے تحت صدر پاکستان کو اختیار حاصل ہے کہ وہ پانچ سالہ مدت ختم ہونے سے قبل بھی اسمبلی کو تحلیل کر دے تاہم اس کے لیے عدالت عظمیٰ کی منظوری کی ضرورت ہوتی ہے۔ اسمبلی تحلیل ہونے کی صورت میں نئے انتخابات کا انعقاد ضروری ہوتا ہے۔

وضاحت[ترمیم]

مزید دیکھیے[ترمیم]

بیرونی روابط[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]