پاکستان پیپلز پارٹی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
پاکستان پیپلز پارٹی
ایوان زیریں پاکستان
94 / 121
سینٹ
27 / 100
ویب سائٹ
http://www.ppp.org.pk/

پاکستان پیپلز پارٹی پاکستان کی ایک اہم سیاسی جماعت ہے اور اسے پاکستان کے عوام کی غالب اکثریت کی تائید اب بھی حاصل ہے۔

پیپلز پارٹی کی بنیاد ذوالفقار علی بھٹو نے رکھی۔ اس پارٹی نے 1970 کے انتخابات میں مغربی پاکستان میں واضح اکثریت سے جیت لئے۔

فوج نے جب اکثریتی پارٹی عوامی لیگ کو اقتدار دینے سے انکار کر دیا تو اسکا نتیجہ مشرقی پاکستان کی علیحدگی کی شکل میں نکلا۔ اس مشکل صورت حال میں پیپلز پارٹی نے ذوالفقار علی بھٹو کی قیادت میں ملک کی باگ دوڑ سنبھالی۔ 1977 میں فوج نے ماضی سے سبق حاصل کئے بغیر دوبارہ اقتدار پر قبضہ کر لیا اور ایک فرضی مقدمے میں پاکستان کی تاریخ کے مقبول ترین وزیراعظم کو سزائے موت دے دی گئی۔ تمام تر ریاستی بندوبست کے باوجود پیپلز پارٹی کو ختم نہیں کیا جاسکا۔ محترمہ بے نظیر بھٹو کے قتل کے بعد اس کی قیادت عملا آصف علی زرداری کے ہاتھ میں ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی اب بھی پاکستان کی بڑی جماعت ہے۔

پیپلز پارٹی کی کامیابیاں[ترمیم]

  • ملک کی تاریخ میں پہلی بار ایک متفقہ آئین بنایا اور نافذ کیا۔
  • پاکستان کا ایٹمی پروگرام شروع کیا۔
  • کراچی اسٹیل مل اور ہیوی انڈسٹری ٹیکسلا شروع کیں۔
  • لاہور میں دوسری اسلامی سربراہی کانفرنس منعقد کی۔
  • 1971ء کی جنگ کے بعد بھارت کی قید سے 90 ہزار فوجیوں کو رہا کروایا۔

تنقید[ترمیم]

  • سوشلزم کا نفاذ صنعتوں پر سوچے سمجھے بغیر کیا گیا۔
  • جاگیرداروں کو پارٹی میں لایا گیا۔
  • مخالفتوں کو دشمنی سمجھ لیا گیا۔
  • جنرل ضیاالحق کو فوج کا سربراہ تعینات کیا گیا۔

موروثی[ترمیم]

جماعت کو موروثی جائیداد کے طور پر چلایا جاتا ہے اور جماعت کے اندر انتخابات سے رہنما چننے کا جمہوری طریقہ نہیں اپنایا جا سکا۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

بیرونی روابط[ترمیم]