شاہ سلطان (دختر سلیم ثانی)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
شاہ سلطان (دختر سلیم ثانی)
(ترکی میں: Şah Hanım Sultan)،(عثمانی ترک میں: سلطانة الملك خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1548  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
مانیسا  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 1 ستمبر 1580 (31–32 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
استنبول،  توپ قاپی محل  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Ottoman flag.svg سلطنت عثمانیہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
والد سلیم دوم  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں والد (P22) ویکی ڈیٹا پر
والدہ نور بانو سلطان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں والدہ (P25) ویکی ڈیٹا پر
بہن/بھائی
خاندان عثمانی خاندان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں خاندان (P53) ویکی ڈیٹا پر

شاہ سلطان (پیدائش: 1544ء— وفات: ستمبر 1580ء) سلطنت عثمانیہ کی شہزادی تھیں۔ وہ سلطان سلطنت عثمانیہ سلیم ثانی اور ملکہ نور بانو سلطان کی بیٹی تھیں۔ شاہ سلطان اپنی دادی ملکہ خرم سلطان اور سلطان سلیمان اول کی چہیتی شہزادی تھیں۔

سوانح[ترمیم]

شاہ سلطان کی پیدائش 1544ء میں مانیسا میں ہوئی۔ عثمانی خاندان میں سلطان سلیمان اول کی پوتیوں اور پوتوں کی شادیوں نے سلطنت عثمانیہ کو مزید مستحکم کیا۔ سلیم ثانی کی تین بیٹیوں کی شادی سلیمان اول کے اواخر عہدِ حکومت میں یعنی یکم اگست 1562ء کو کی گئیں۔ اسمخان سلطان کی شادی صوقلو محمد پاشا سے، گوہرخان سلطان (دختر سلیم ثانی) کی شادی پیالے پاشا سے اور شاہ سلطان کی شادی حسن آغا سے ہوئی۔ اِسی دن مقتول شہزادہ مصطفی کی بیٹی مہرشاہ سلطان کی شادی داماد عبد الکریم پاشا سے ہوئی۔

7 ستمبر 1566ء کو سلطان سلیمان اول کا انتقال ہوا تو شاہ سلطان اپنے والدہ نور بانو سلطان اور والد سلیم ثانی کے ہمراہ دار الحکومت استنبول آگئیں جہاں اُن کا قیام توپ قاپی محل میں رہا۔ استنبول میں قیام کے دوران اُنہوں نے اپنے والد سلیم ثانی کا عہد حکومت دیکھا اور اپنے بھتیجے مراد ثالث کا عہدِ حکومت بھی دیکھا۔ 1574ء میں حسن آغا کے انتقال کے بعد شاہ سلطان نے ذال محمود پاشا سے شادی کرلی۔ شاہ سلطان کی عمر کا آخری حصہ بہت خوشگوار گزرا اور توپ قاپی محل میں وہ تقریباً 36 سال کی عمر ستمبر 1580ء میں انتقال کرگئیں۔ شاہ سلطان نے ایک بیٹا اور ایک بیٹی اپنے بعد چھوڑے۔

مزید پڑھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]