امرت کور

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
راج کماری امرت کور
امرت کور

معلومات شخصیت
پیدائش 2 فروری 1889(1889-02-02)
لکھنؤ  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 6 فروری 1964(1964-20-60) (عمر  75 سال)
نئی دہلی  ویکی ڈیٹا پر مقام وفات (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت انڈین نیشنل کانگریس
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ اوکسفرڈ  ویکی ڈیٹا پر تعلیم از (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ سیاست دان، ٹینس کھلاڑی، فعالیت پسند  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان گجراتی[1]  ویکی ڈیٹا پر زبانیں (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تنظیم St John Ambulance,
Tuberculosis Association,
Indian Red Cross, آل انڈیا انسٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز
تحریک تحریک آزادی ہند
کھیل ٹینس  ویکی ڈیٹا پر کھیل (P641) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

راج کماری امرت کور (2 فروری 1889ء — 6 فروری 1964ء) بھارت کی پہلی وزیر صحت تھیں اور دس برس اس منصب پر فائز رہیں۔ وہ ایک معروف مجاہدہ آزادی اور سماجی خدمت گار تھیں۔ نیز وہ اس مجلس کی رکن بھی تھیں جسے آئین ہند کی تشکیل و ترتیب کی ذمہ داری سونپی گئی تھی۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

امرت کور 2 فروری 1889ء کو لکھنؤ، اترپردیش میں پیدا ہوئیں۔ امرت اور ان کے سات بھائی راجا ہرنام سنگھ کی اولاد تھے جو کپورتھلہ ریاست کے رکن تھے۔[5] امرت کی والدہ رانی ہرنام سنگھ بنگالی پریسبٹیرین ماں اور انگلیکان باپ کی بیٹی تھی۔

ان کی ابتدائی تعلیم شیربورن اسکول برائے طالبات، ڈورسیٹ انگلینڈ میں اور اعلی تعلیم اوکسفرڈ یونیورسٹی میں ہوئی۔ انگلستان میں اپنی تعلیم مکمل کرنے کے بعد وہ ہندوستان واپس آگئی۔

بھارتی تحریک آزادی میں شرکت[ترمیم]

امرت کور کے والد راجا ہرنام سنگھ بہت سے کانگریسی رہنماﺅں بشمول گوپال کرشن گوکھلے کے معتمد تھے۔ اپنے والد کے گھر ان کانگریسی رہنماﺅں کی آمد و رفت سے امرت کو بھی اس جنگ آزادی سے دلچسپی پیدا ہونے لگی۔ 1919ء میں بمبئی میں امرت کور گاندھی جی سے ملیں اور ان کے افکار و نظریات اور ملک کے تئیں ان کے نقطہ نظر سے خاصی متاثر ہوئیں۔

اسی سال برطانوی سپاہیوں کے ہاتھوں جلیانوالہ باغ کے قتل عام نے انہیں قائل کر لیا کہ برطانوی راج سے خلاصی ناگزیر ہو گئی ہے۔ چنانچہ وہ کانگریس میں شامل ہو گئیں اور جنگ آزادی میں سرگرمی سے حصہ لیا۔ سنہ 1930ء میں ڈانڈی مارچ میں شریک ہونے کی پاداش میں انہیں جیل میں ڈال دیا گیا۔

سنہ 1927ء میں امرت کور آل انڈیا ویمن کانفرنس کے قیام میں شریک رہیں، 1930ء میں اس کی معتمد اور 1933ء میں صدر بنیں۔ وہ 1934ء میں مہاتما گاندھی کے آشرم میں منتقل ہوئی، اشرافیہ پس منظر رکھنے کے باوجود یہاں ان کی زندگی انتہائی سادہ تھی۔ گاندھی کے معتمد کے طور پر انہوں نے 16 برس خدمات انجام دیں۔

وفات[ترمیم]

امرت کور 6 فروری 1964ء کو نئی دہلی میں وفات پائی۔[6][7] ان کے نجی دستاویز تین مورتی ہاؤز، دہلی میں واقع نہرو میموریل میوزیم اینڈ لائبریری کے آرکائیو میں موجود ہیں۔[8]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb122236446 — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  2. ایس این اے سی آرک آئی ڈی: https://snaccooperative.org/ark:/99166/w68d2vrd — بنام: Rajkumari Amrit Kaur — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  3. بنام: Amrit Rajkumari Kaur — FemBio ID: http://www.fembio.org/biographie.php/frau/frauendatenbank?fem_id=15314 — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  4. ^ ا ب Munzinger person ID: https://www.munzinger.de/search/go/document.jsp?id=00000003421 — بنام: Rajkumari Amrit Kaur — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  5. Tribune India
  6. Verinder Grover (1993). Great Women of Modern India. Vol. 5: Raj Kumari Amrit Kaur. Deep & Deep. ISBN 9788171004591. 
  7. "Rajkumari Amrit Kaur, 75, Dies". New York Times. 6 February 1964. مؤرشف من الأصل في 24 دسمبر 2018. 
  8. "Archives". Nehru Memorial Museum & Library. مؤرشف من الأصل في 03 مئی 2011. 

بیرونی روابط[ترمیم]