ہندوستان چھوڑ دو تحریک

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
ہندوستان چھوڑدو تحریک، بنگلور

ہندوستان چھوڑدو تحریک (انگریزی:Quit India Movement ، ہندی:भारत छोड़ो आन्दोलन تلفظ:بھارت چھوڑو آندولن)، برصغیر پاک وہند میں چلنے والی ایک تحریک کو کہا جاتا ہے جس کا آغاز مہاتما گاندھی نے کیا۔ یہ انڈین نیشنل کانگریس کی تحریک تھی جس کا مقصد سول نافرمانی کر کے انگریز سرکار کو ہندوستان چھوڑنے پر مجبور کرنا تھا۔کرپس کی تجاویز غیر موثر ہوچکی تھیں۔ کانگریس نے انگریز سرکار کی کمزوری سے فائدہ اٹھاتے ہوئے فوری طور پر انگریزوں کو ہندوستان چھوڑنے کا الٹی میٹم دیا۔ مہاتما گاندھی نے 8 اگست 1942ء کو اپنے خطاب میں کہا کرو یا مرو، مہاتما گاندھی کے سخت بیان کے بعد کانگریس نے احتجاجی ریلیاں نکالیں اور انگریزوں سے ہندوستان چھوڑنے کا مطالبہ کیا[1]۔ان سب چیزوں کا برطانوی حکومت نے سخت نوٹس لیا یہاں تک کہ مہاتما گاندھی سمیت کئی کانگریسی لیڈران گرفتار کیے گئے۔

مسلم لیگ نے اس تحریک کی کوئی حمایت نہیں کی اور نہ ہی اس تحریک میں کانگریس ساتھ دیا۔مسلم لیگ کے پارٹی بیان میں کہا گیا کہ مسلم لیگ کانگریس کو اس بات کی اجازت نہیں دے گی کہ وہ اپنی شرائط بزورِ دست حکومت پر مسلط کرے اور اس کے ساتھ ساتھ مسلم لیگ انگریز سرکار کو بھی اجازت نہیں دے گی کہ وہ ہندوستان کو تقسیم کیے بغیر ہندوستان چھوڑ کر جائے۔[2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. http://www.open.ac.uk/researchprojects/makingbritain/content/1942-quit-india-movement
  2. Martin Sieff, Shifting superpowers: the new and emerging relationship between the United States, China, and India (2009) p 21

مزید دیکھیے[ترمیم]