ابو الفتوح شہاب الدین سہروردی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ابوحفص شہاب الدین سہروردی سے مغالطہ نہ کھائیں۔
شہاب الدین یحیی ابن حبش ابن امیرک ابوالفتوح سہروردی
مذہب اسلام، (تصوف، اشعری[1] اور شافعی[1])
دیگر نام سہروردی، شہاب الدین
ذاتی تفصیل
پیدائش 1154ء (549ھ)

سہرورد (موجودہ صوبہ زنجان، ایران)
وفات 1191ء (587ھ)

حلب (موجودہ شام)
بلند مرتبہ
مقام سہرورد
خطاب شیخ الاشراق
دور بارہویں صدی

شہاب الدین یحیی ابن حبش بن امیرک ابوالفتوح سہروردی، المعروف نور الانوار، شہاب‌الدین، شیخ اشراق، شیخ مقتول و شیخ شہید کی ولادت سہرورد میں 549ھ بمطابق 1154ءمیں ہوئی۔ آپ مشہور ایرانی فلسفی اور مکتب اشراق کے بانی تھے۔ آپ ایران کے صوبہ زنجان کے علاقے قیدار کے رہائشی تھے۔ آپ کی بعض فلسفیانہ اور صوفیانہ آرا کی وجہ سے علما وقت نے آپ کے قتل کا فتویٰ دیا۔ سلطان الظاہر غازی نے آپ کو قلعہ حلب میں مقید کر دیا اور وہیں آپ کو تختۂ دار پر لٹکا دیا گیا- آپ کی تصانیف میں ’’حکمۃ الاشراق‘‘ بہت مشہور ہے، اس کے علاوہ ’’ التلویحات‘‘، ’’ھیاکل النور‘‘ اور ’’ المشارع والمطارحات‘‘ بھی آپ کی تصانیف ہیں۔ اول الذکر سے آپ کو ممتاز کرنے کے لیے آپ کے نام کے ساتھ ’’ صاحب حکمۃ الاشراق‘‘ لگایا جاتا ہے یا شیخ شہاب الدین یحییٰ سہر وردی لکھا جاتا ہے۔ آپ کی وفات 587ھ بمطابق 1191ء حلب، شام میں ہوئی۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب C.E. Bosworth؛ E. van Donzel؛ W.P. Heinrichs؛ G. Lecomte (1997)۔ Encyclopaedia of Islam (New Edition)۔ Volume IX (San-Sze)۔ Leiden, Netherlands: Brill۔ صفحہ 781۔ آئی ایس بی این 9004104224۔