کبشہ بنت ثابت

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

كبشہ بنت ثابت بن منذر بن حرام انصاریہ ہیں جو حضرت حسان ابن ثابت کی بہن ہیں انہیں کبیشہ بھی کہا جاتا ہے، ان کا لقب برضاء ہے۔ یہ قبیلہ انصار کی بہت ہی جاں نثار صحابیہ ہیں ایک مرتبہ رسول ﷲ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے ان کی مشک کے منہ سے اپنا منہ لگا کر پانی نوش فرما لیا تو حضرت کبشہ نے اس مشک کا منہ کاٹ کر تبرکاً اپنے پاس رکھ لیا۔[1]

ایک صحابیہ حضرت کبشہ انصاریہ کے گھر حضور تشریف لے گئے اور ان کی مشک کے منہ سے آپ نے اپنا منہ لگا کر پانی نوش فرما لیا تو حضرت کبشہ رضی ﷲ تعالیٰ عنہا نے اس مشک کا منہ کاٹ کر تبرکاً اپنے پاس رکھ لیا۔[2][3] ان کو کاٹ کر رکھ لینا بغرض تبرک تھا، کہ چونکہ اس سے حضور (صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم) کا دہن اقدس لگا ہے، یہ برکت کی چیز ہے اور اس سے بیماروں کو شفا ہوگی۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. الاستیعاب، باب النساء، باب الکاف 3511، کبشۃ الأنصاریۃ، ج4، ص460
  2. سنن ابن ماجہ، کتاب الاشربۃ، باب الشرب قائما، الحدیث:3423، ج4، ص 80
  3. سنن الترمذی، کتاب الأشربۃ، باب ماجاء في الرخصۃ۔..إلخ، الحدیث:1899، ج3، ص355.