ربیع بنت نضر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ربیع بنت نضر
معلومات شخصیت
اولاد حارثہ بن سراقہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں اولاد (P40) ویکی ڈیٹا پر
بہن/بھائی
انس بن نضر  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں بہن/بھائی (P3373) ویکی ڈیٹا پر

رُبَیِّع بنت نضر یہ صحابیہ انصاریہ انکی کنیت ام حارثہ تھی بنو عدی بن النجار سے تھیں۔
یہ مشہور صحابی انس بن مالک کی پھوپھی ہیں بہت ہی بہادر اور بلند حوصلہ صحابیہ ہیں ان کے فرزند حارثہ بن سراقہ بھی بہت باکمال ہوئے انصاری خاندان میں قابل فخر عورت تھیں جب ان کے بیٹے حارثہ شہید ہو گئے تو انھوں نے کہا کہ یا رسول اﷲﷺ! اگر میرا بیٹا جنت میں ہے تو میں صبر کروں گی ورنہ اتنا غم کھاؤں گی کہ آپ ﷺ بھی دیکھیں گے تو آپﷺ نے فرمایا کہ تیرا بیٹا جنت الفردوس میں ہے۔[1] انس بن مالک فرماتے ہیں کہ ربیع بنت نضر کے صاحبزادے حارثہ بن سراقہ کو بدر کے دن ایک تیر لگا نہ معلوم کس نے مارا۔ چنانچہ ربیع بنت نضر نبی اکرم ﷺ کی خدمت میں حاضر ہوئیں اور عرض کیا یا رسول اللہ ! مجھے حارثہ کے متعلق بتایئے۔ اگر خیر سے ہے تو ثواب کی امید رکھوں اور صبر کروں اور اگر ایسا نہیں تو اس کے لیے زیادہ سے زیادہ دعا کی کوشش کریں۔ اللہ کے نبی ﷺ نے فرمایا ام حارثہ جنت میں کئی باغ ہیں اور تمہارا بیٹا فردوس اعلیٰ میں ہے۔ فردوس جنت کی بلند زمین ہے اور یہ درمیان میں ہے اور سب سے افضل ہے۔[2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. الاستیعاب ،باب النساء،باب الراء 3371،الربیع بنت النضر،ج4،ص397
  2. جامع ترمذی:جلد دوم:حدیث نمبر 1121