رومی سلطنت

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
رومی سلطنت
Roman Empire
Consul et lictores.png
27 ق م – 395 عیسوی (غیر منقسم)
395 – 480 (مغربی رومی سلطنت)
395 – 1453 (بازنطینی سلطنت)
Julius Nepos Tremissis.jpg
 
Constantine multiple CdM Beistegui 233.jpg

قومی نشان

The Roman Empire in 117 AD, at its greatest extent during تراجان's reign.[1]
دارالحکومت روم (27–)

Mediolanum (286–402, مغربی رومی سلطنت)
Augusta Treverorum
سرمیوم
راوینا (402–476، مغربی)
Nicomedia (286–330, بازنطینی سلطنت)
قسطنطنیہ (330–1453، مشرقی)

زبانیں علاقائی / مقامی زبانیں
مذہب
حکومت مخلوط، فعلی مطلق بادشاہت
رومی شہنشاہ
 - 27 ق م – عیسوی 14 آگستس (اول)
 - 98–117 تراجان
 - 284–305 Diocletian
 - 306–337 قسطنطین اعظم
 - 379–395 Theodosius Ia
مقننہ سینٹ
تاریخی دور Classical era to Late Antiquity
 - Final War of the
Roman Republic
32–30 ق م
 - Empire established 30–2 ق م
 - سلطنت
اپنے عروج پر
عیسوی 117
 - قسطنطنیہ
دارالحکومت بنا
330
 - مغربی رومی سلطنت East West divide 395
 - Fall of the (Western) Roman Empire 476
رقبہ
 - 25 ق م[2][3] 2,750,000 مربع کلومیٹر (1,061,781 مربع میل)
 - 117 AD [2][4] 5,000,000 مربع کلومیٹر (1,930,511 مربع میل)
 - 390 عیسوی [2] 4,400,000 مربع کلومیٹر (1,698,849 مربع میل)
آبادی
 - 25 ق م[2][3] تخمینہ 56,800,000 
     کثافت 20.7 /مربع کلومیٹر  (53.5 /مربع میل)
سکہ Sestertius,b Aureus, Solidus, Nomisma
موجودہ ممالک
  • a The final emperor to rule over all of the Roman Empire's territories before its conversion to a diarchy.
Warning: Value not specified for "common_name"|- style="font-size: 85%;" Warning: Value specified for "continent" does not comply
رومی سلطنت اپنے عروج پر، سرخ رنگ اور بنفشی رنگ بالترتیب بعد از تقسیم کی مغربی رومی سلطنت اور بازنطینی سلطنت کو ظاہر کررہے ہیں

زمانۂ قدیم کی ایک سلطنت، جس کا دارالحکومت روم تھا۔ اس سلطنت کا پہلا بادشاہ آگسٹس سیزر تھا جو 27 قبل مسیح میں تخت پر بیٹھا۔ اس سے قبل روم ایک جمہوریہ تھا جو جولیس سیزر اور پومپے کی خانہ جنگی اور گائس ماریئس اور سولا کے تنازعات کے باعث کمزور پڑگئی تھی۔

کئی موجودہ ممالک بشمول انگلستان، اسپین، فرانس، اٹلی، یونان، ترکی اور مصر اس عظیم سلطنت کا حصہ تھے۔ رومی سلطنت کی زبان لاطینی اور یونانی تھی۔ مغربی رومی سلطنت 500 سال تک قائم رہی جبکہ مشرقی یعنی بازنطینی سلطنت، جس میں یونان اور ترکی شامل تھے، ایک ہزار سال تک موجود رہی۔ مشرقی سلطنت کا دارالحکومت قسطنطنیہ تھا۔

مغربی رومی سلطنت 4 ستمبر 476ء کو جرمنوں کے ہاتھوں تباہ ہوگئی جبکہ بازنطینی سلطنت 29 مئی 1453ء میں عثمانیوں کے ہاتھوں فتح قسطنطنیہ کے ساتھ ختم کردی۔

اپنے عروج کے دور میں رومی سلطنت 5،900،000 مربع کلومیٹر (2،300،000 مربع میل) پر پھیلی ہوئی تھی۔ مغربی تہذیب کی ثقافت، قانون، طرزیات، فنون، زبان، مذاہب، طرز حکومت، افواج اور طرز تعمیر میں آج بھی رومی سلطنت کی جھلک نظر آتی ہے۔

متعلقہ مضامین[ترمیم]

Incomplete-document-purple.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کرکے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔

نگار خانہ[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Bennett, J. Trajan: Optimus Princeps. 1997. Fig. 1. Regions east of the دریائے فرات river were held only in the years 116–117.
  2. ^ 2.0 2.1 2.2 Taagepera، Rein (1979). "Size and Duration of Empires: Growth-Decline Curves, 600 B.C. to 600 A.D". Social Science History (Duke University Press) 3 (3/4): 118. doi:10.2307/1170959. http://www.jstor.org/stable/1170959?seq=4. 
  3. John D. Durand, Historical Estimates of World Population: An Evaluation, 1977, pp. 253–296.
  4. Turchin، Peter; Adams، Jonathan M.; Hall، Thomas D (December 2006). "East-West Orientation of Historical Empires". Journal of world-systems research 12 (2): 219–229. ISSN 1076-156X. http://peterturchin.com/PDF/Turchin_Adams_Hall_2006.pdf۔ اخذ کردہ بتاریخ 6 February 2016. 
  1. Other ways of referring to the "Roman Empire" among the Romans and Greeks themselves included Res publica Romana or Imperium Romanorum (also in Greek: Βασιλεία τῶν Ῥωμαίων – Basileíā tôn Rhōmaíōn – ["Dominion (Literally 'kingdom') of the Romans"]) and Romania. Res publica means Roman "commonwealth" and can refer to both the Republican and the Imperial eras. Imperium Romanum (or Romanorum) refers to the territorial extent of Roman authority. Populus Romanus ("the Roman people") was/is often used to indicate the Roman state in matters involving other nations. The term Romania, initially a colloquial term for the empire's territory as well as a collective name for its inhabitants, appears in Greek and Latin sources from the 4th century onward and was eventually carried over to the بازنطینی سلطنت (see R. L. Wolff, "Romania: The Latin Empire of Constantinople" in Speculum 23 (1948), pp. 1–34 and especially pp. 2–3).