عبد الرحمٰن السدیس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
شیخ عبد الرحمٰن السدیس
(عربی میں: عبد الرحمن السديسخاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
شیخ عبد الرحمٰن السدیس قرآن اعزاز کی نویں تقریب کے موقع پر دبئی میں
شیخ عبد الرحمٰن السدیس قرآن اعزاز کی نویں تقریب کے موقع پر دبئی میں

معلومات شخصیت
پیدائش 10 فروری 1962 (55 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
ریاض  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of Saudi Arabia.svg سعودی عرب  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
مذہب اسلام
زوجہ فاطمة بنت علی السديس
اولاد عبدالعزیز، بکر، صہیب، عبداللہ، سمیہ، زینب، امیمہ، نسیبہ، ملیکہ
عملی زندگی
پیشہ امام
تصنیفی زبان عربی[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں بولی، لکھی اور دستخط کی گئیں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر
ویب سائٹ
ویب سائٹ http://alsudays.com

عبد الرحمن بن عبد العزيز بن عبد اللہ بن محمد السديس (پ فروری 10 1960) صدر امور مسجد الحرام مکہ مکرمہ و مسجد نبوی مدینہ منورہ، امام الحرم المکی اور 2005 کی اسلامی شخصیت ہیں۔ وہ قرآن کریم کی بہترین تلاوت کے لیے دنیا بھر میں مشہور ہیں۔ حفص عن عاصم الكوفي کی روایت میں قرات کرتے ہیں۔ انکے دل میں امت مسلمہ کا بہت درد ہے، جس کا اظہار انکے خطبات و دعاوں سے ہوتا ہے۔

پیدائش

امام کعبہ ڈاکٹر عبدالرحمٰن السدیس برطانیہ کی مسجد میں خطاب فرمارہے ہیں
امام کعبہ ڈاکٹر عبدالرحمٰن السدیس
امام کعبہ ڈاکٹر عبدالرحمٰن السدیس

عبد الرحمن السدیس کا تعلق مشہور قبیلہ عنزۃ سے ہے۔ ان کا آبائی علاقہ سعودی عرب کے شہر القصیم ہے جبکہ ان کی ولادت ریاض شہر میں فروری 10 1960ء م 1382ھ میں ہوئی۔

نام و نسب

ان کی کنیت ابو عبدالعزیز ہے جبکہ نام اور نسب کچھ یوں ہے: عبدالرحمٰن بن عبداللہ بن محمد بن عبدالعزیز بن محمد بن عبداللہ(السدیس) ہے۔

تعلیم و تدریس

الشیخ السدیس نے بچپن ہی میں ریاض کے ایک تعلیمی ادارے سے بارہ سال کی عمر میں قرآن کریم حفظ کیا۔ انہوں نے ابتدائی تعلیم مثنٰی بن حارثہ ایلیمنٹریاسکول ریاض میں حاصل کی، 1979ء میں ریاض سائنٹفک انسٹی ٹیوٹ سے گریجویشن کی۔ 1983ء میں ریاض یونیورسٹی سے شریعہ کی ڈگری حاصل کی۔ 1987ء میں امام محمد بن سعود اسلامک یونیورسٹی سے ماسٹرز کیا جبکہ ڈاکٹریٹ کی سند 1995ء میں ام القرٰی یونیورسٹی مکہ مکرمہ سے حاصل کی۔ اور بعد ازیں اسی جامعہ میں معین مدرس کی حیثیت سے تدریس کے فرائض انجام دینے لگے۔

مشاغل

صدارت امور مسجد حرام و مسجد نبوی

1433ھ میں شیخ سدیس کو امور حرم مکی و مدنی کی صدارت کا منصب عطا کیا گیا۔
17 جمادی الثانی 1433ھ کو منگل کے روز شاہی فرمان جاری ہوا، جس میں سابق صدر صالح بن عبدالرحمن الحصين کی صحت کی خرابی کے پیش نظر انکا استعفا قبول کرتے ہوئے عبد الرحمن السدیس کو ان کی جگہ صدر مقرر کیا گیا۔ ملاحظہ فرمائیں شاہی فرمان:

بسم اللہ الرحمن الرحيم الرقم أ / 129 التاريخ 17/6/1433هـ بعون اللہ تعالى نحن عبداللہ بن عبدالعزيز آل سعود ملك المملكة العربية السعودية بعد الاطلاع على المادة الثامنة والخمسين من النظام الأساسي للحكم الصادر بالأمر الملكي رقم أ/90 بتاريخ 27/8/1412هـ ۔ وبعد الاطلاع على نظام الوزراء ونواب الوزراء وموظفي المرتبة الممتازة الصادر بالمرسوم الملكي رقم م/10 بتاريخ 18/3/1391هـ۔ وبعد الاطلاع على الأمر الملكي رقم أ/188 وتاريخ 7/12/1430هـ ۔ وبعد الاطلاع على الأمر الملكي رقم أ/14 بتاريخ 3/3/1414هـ ۔ وبعد الاطلاع على ما رفعہ لنا معالي الشيخ صالح بن عبدالرحمن الحصين الرئيس العام لشؤون المسجد الحرام والمسجد النبوي عن طلبہ إعفاءہ من منصبہ لظروفہ الصحية ۔ أمرنا بما هو آت : أولاً : الموافقة على طلب معالي الشيخ صالح بن عبدالرحمن الحصين الرئيس العام لشؤون المسجد الحرام والمسجد النبوي إعفاءہ من منصبہ لظروفہ الصحية ۔ ثانياً : يعين فضيلة الشيخ عبدالرحمن بن عبدالعزيز السديس رئيساً عاماً لشؤون المسجد الحرام والمسجد النبوي بمرتبة وزير ۔ ثالثاً : يبلغ أمرنا هذا للجهات المختصة لاعتمادہ وتنفيذہ ۔

امامت حرم مکی

حرم مکی میں امامت کا آغاز 23 مئی 1984 سے ہوا، جہاں شیخ نے سب سے پہلی عصر کی نماز کی امامت کی۔

حسن آواز

عبدالرحمٰن السدیس اپنی خوبصورت آواز، اور قرآن کریم کی بہترین اور پراثر تلاوت کے لیے مشہور ہیں۔ ان کی دوسری وجہ شہرت وہ زوردار خطبے ہیں جو وہ امت مسلمہ کی حالت زار پر حرم مکی میں دیتے ہیں۔ 2007 میں الشیخ السدیس نے پاکستان کا دورہ کیا جہاں ان کا فقید المثال استقبال کیا گیا۔ عبدالرحمٰن السدیس کی آواز میں اللہ نے بڑا اثر رکھاہے۔ کم از کم دو افراد کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ انہوں نے پورا قرآن کریم صرف ان کی کیسٹس سے تلاوت سن کر حفظ کر لیا۔ امام کعبہ نے 2004 میں برطانیہ کا دورہ کیا اور اس موقع پر انہوں نے قرات کے ساتھ تلاوت قرآن کریم ریکارڈ کروانے کا بھی کہا۔ تادم تحریر ان کی تلاوت کی قرات کے ساتھ ریکارڈنگ جاری ہے۔

  1. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb14230683v — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ