احمد بن ابراہیم دورقی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
احمد بن ابراہیم دورقی
معلومات شخصیت
تاریخ پیدائش سنہ 784  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ وفات 9 نومبر 860 (75–76 سال)  ویکی ڈیٹا پر تاریخ وفات (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مذہب اسلام
فرقہ اہل سنت
فقہی مسلک حنبلی
عملی زندگی
پیشہ محدث  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
P islam.svg باب اسلام

احمد بن ابراہیم الدورقی تبع تابعی تھے، ابتدائی اعلام حنابلہ میں شمار کیے جاتے تھے۔ پورا نسب یوں ہے۔ احمد بن ابراہیم بن کثیر بن زید بن افلح بن منصور بن مزاحم ابو عبد اللہ العبدی الدورقی۔ سنہ 168 ہجری، مطابق 784 عیسوی میں پیدا ہوئے۔ مشہور حافظ حدیث یعقوب الدورقی کے بھائی تھے اور معروف ثقہ محدث و راوی عبد اللہ بن احمد الدورقی کے والد تھے۔ دورق عربی زبان کا لفظ ہے جو زاہدوں اور عابدوں کی خاص ٹوپی کو کہا جاتا ہے۔ احمد بن ابراہيم اس ٹوپی کی تجارت کیا کرتے تھے، اس لیے ان کی نسبت دورقی ہے۔ اور بعض لوگوں کا کہنا ہے کہ ان کے والد ابراہیم بن کثیر بہت عبادت گزار اور زاہد تھے، چنانچہ اس زمانے میں جو عابد و زاہد ہوا کرتے تھے اُنہیں دورقی کہا جاتا تھا۔[1]

اساتذہ حدیث[ترمیم]

احمد بن ابراہیم نے اسماعیل بن علیہ، یزید بن زریع، جریر بن عبد الحمید، حفص بن غیاث، وکیع، ابن فضیل، یزید بن ہارون، اسحاق الازرق، بہز بن اسد اور ہشیم بن بشیر سے حدیث روایت کی ہے۔

تلامذہ حدیث[ترمیم]

احمد بن ابراہیم سے مسلم، ابو داود، ترمذی، ابن ماجہ، ہیثم بن خلف الدوری، محمد بن محمد بن بدر باہلی، ابو القاسم البغوی، ابن صاعد، بقی بن مخلد، ابو یعلیٰ موصلی اور ابن ابی الدنیا نے روایت بیان کی ہے۔

وفات[ترمیم]

21 شعبان سنہ 246 ہجری، مطابق 9 نومبر 860 عیسوی کو سنیچر کے دن عراق کے شہر سامراء میں 80 سال کی عمر میں وفات پائی۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. سير أعلام النبلاء الطبقة الثالثة عشر أحمد بن إبراهيم المكتبة الإسلامية. وصل لهذا المسار في 4 أبريل 2016ش نسخہ محفوظہ 31 مئی 2017 در وے بیک مشین

ماخذ[ترمیم]