وشنو

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
وشنو
حفاظت، تحفظ اچھائی، بحالیِ دھرم، موکش کا بھگوان[1][2]
Bhagavan Vishnu.jpg
وشنو
ملحقہ براہمن (وشنو دھرمتریمورتی، دیو (ہندومت)
مسکن ویکنتھ
ہتھیار قرص (سدھرشن چکر) اور بلم (کومودکی گدا)[3]
علامات کنول، شیش ناگ
سواری گرود[3]
تہوار ہولی، رام نوامی، کرشن جنم اشٹمی، ناریشم جاینتی، اونم، تلسی ویواہ;[4]
شریک حیات لکشمی

وشنو (Viṣṇu) ہندو مت کے اہم نظریے تری مورتی کا دوسرا جزو ہے جو خدا کی ربوبیت اور رحمت سے متصف ہے۔ یعنی اگر براھما کو تخلیق کار کے روپ میں دیکھا جاتا ہے تو وشنو اپنی رحمت و شفقت سے کائنات کو قائم رکھے ہوئے ہے لہذا اسے پالن ہار کا درجہ حاصل ہے۔ ویدوں اور اپنیشدوں میں وشنو کا بار ہا ذکر آیا ہے۔ اسے نارائن کے نام سے بھی یاد کیا جاتا ہے۔ فی زمانہ اہل ہنود کی تعداد دو بڑے مکتب فکر میں بٹی ہے، ایک وشنو مت کے ماننے والے اور دوسرے شیو مت کے پیروکار۔ ان میں اول الذکر واضح اکثریت میں ہیں۔ رام اور کرشن وشنو ہی کے اوتار ہیں۔

نگار خانہ[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Wendy Doniger (1999)۔ Merriam-Webster's Encyclopedia of World Religions۔ Merriam-Webster۔ صفحہ۔1134۔ https://books.google.com/books?id=ZP_f9icf2roC&pg=PA1134۔ 
  2. Editors of Encyclopaedia Britannica (2008)۔ Encyclopedia of World Religions۔ Encyclopaedia Britannica, Inc.۔ صفحات۔445–448۔ https://books.google.com/books?id=dbibAAAAQBAJ&pg=PA445۔ 
  3. ^ 3.0 3.1 Constance Jones; James D. Ryan (2006)۔ Encyclopedia of Hinduism۔ Infobase Publishing۔ صفحات۔491-492۔ https://books.google.com/books?id=OgMmceadQ3gC۔ 
  4. Muriel Marion Underhill (1991)۔ The Hindu Religious Year۔ Asian Educational Services۔ صفحات۔75–91۔ https://books.google.com/books?id=Fb9Zc0yPVUUC۔