پاکستان سپر لیگ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
پاکستان سپر لیگ
Pakistan Super League.png
ممالک پاکستان
منتطمپاکستان کرکٹ بورڈ
فارمیٹٹوئنٹی/20
پہلا بار2016
تازہ ترین2021
اگلی بار2022
فارمیٹدوہرا راؤنڈ روبن اور ناک آؤٹ
ٹیموں کی تعداد6 (موجودہ)
موجدہ فاتیملتان سلطانز (پہلی بار)
زیادہ کامیاباسلام آباد یونائیٹڈ (2 بار)
زیادہ رنبابر اعظم (2070)[1]
زیادہ ووکٹیںوہاب ریاض (94)[2]
ٹی ویپی ٹی وی سپورٹس اور جیو سپر
2022
ویب سائٹpsl-t20.com

پاکستان سپر لیگ پاکستان کی ٹی/20 پریمئر لیگ ہے۔ یہ لیگ ٹیموں کے نام کی بجائے شہروں کے نام پر مشتمل ہے۔ اس لیگ کا مقصد بین الاقوامی کرکٹ ٹیموں کو پاکستان میں کھیلنے میں آمادہ کرنا اور پاکستان میں ٹوئنٹی/20 کرکٹ کا فروغ ہے۔ اس لیگ کا افتتاح 26 مارچ 2013ء کو ہونا تھا لیکن چند ناگزیر وجوہات کی وجہ سے اسی ملتوی کر دیا گیا۔ بعد ازاں، اس کا پہلا ایڈیشن 4 تا 23 فروری، 2016ء شارجہ اور دبئی میں کھیلی گئی 2019 میں ادھا اور2020 میں پوری لیگ پاکستان میں کھیلی گںٔی اور 2018 میں چھٹی ٹیم کی حیثیت سے ملتان سلطان کو کھلایا گیا[3]

معلومات[ترمیم]

پاکستان سپر لیگ کی پانچ فرنچائز کی نیلامی ملین93$ ڈالر کے عوض دس سال کے لیے کی گئی سب سے بڑی بولی کراچی کنگز کے لیے لگائی گئی۔ پاکستان سپر لیگ کے پہلے ایڈیشن میں ہر ٹیم میں 16کھلاڑی شامل کئیے گئے۔ کھلاڑیوں کو پانچ کیٹگریز میں تقسیم کیا گیا۔ * پلاٹینم 193000$

  • ڈائمنڈ 65000$
  • گولڈ 47000$
  • سلور 28000$
  • ایمرجنگ 25000$

مزید توسیع[ترمیم]

پاکستان کرکٹ بورڈ کے مطابق 2019ءمیں اس لیگ کے چوتھے سلسہ میں 8 ٹیمیں کر دی جائیں گی اور 59 میچ کھیلے جائیں گے۔[4]

سارے پاکستانی میچز دیکھیے پی ٹی ؤی سپورٹس پر

لیگ کی ساخت[ترمیم]

قدر[ترمیم]

مئی 2016ء میں، پی سی بی نے اعلان کیا کہ پی ایس ایل کے افتتاحی سیزن سے 2.6 ملین امریکی ڈالر کا منافع ہوا ہے۔[5]

نیلامی[ترمیم]

پاکستان سپر لیگ کی پانچ فرنچائز کو 93 ملین امریکی ڈالر کے عوض دس سال کے لیے فروخت کیا گیا۔

کھلاڑیوں کی نیلامی[ترمیم]

پاکستان سپر لیگ کے لیے کھلاڑیوں کو پانچ درجوں میں تقسیم کیا گیا۔ کھلاڑی زیادہ سے زیادہ قیمت نیلامی کی قیمت 140,000 امریکی ڈالر تھی۔ پاکستان نے کھلاڑیوں کے لیے 2 ملین امریکی ڈالر کا بیمہ کروایا اور غیر ملکی کھلاڑیوں کی آمدنی کو ٹیکس سے مستثنیٰ قرار دیا گیا۔[6]

زمرہ قمیت ($)
پلاٹینم $190,000
ڈائمنڈ $65,000
گولڈ $47,000
سلور $28,000
امرجنگ $25,000

کھلاڑی[ترمیم]

پاکستان کرکٹ بورڈ نے پہلے تین سالوں کے لیے لیگ پانچ ٹیموں پر مشتمل ہو گی اور ہر ٹیم میں 6 غیر ملکی اور 10 مقامی کھلاڑی اور 2 ابھرتے ہوئے کھلاڑی شامل ہوں گے۔[7][8]

سیزن[ترمیم]

افتتاحی سیزن 4 تا 23 فروری شارجہ اور دوبئی میں کھیلا گیا سیمی فائنل تک ہر ٹیم نے دوسری ٹیم سے دو میچ کھیلے۔ فائنل میں اسلام آباد یونائٹڈ نے کوئٹہ گلیڈیٹرز کو 6وکٹ سے ہرا کرچیمپئن ہونے کا اعزاز حاصل کیا ویسٹ انڈیز کے ڈیوائن سمتھ کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔ اس ٹورنامنٹ میں پاکستان کے عمر اکمل 335 رنز کے ساتھ ٹاپ اسکوررجبکہ ویسٹ انڈیز کے آندرے رسل ٹاپ وکٹ ٹیکر رہے ۔

ٹیمیں[ترمیم]

ٹیم شہر/صوبہ مالک قیام کپتان کوچ
اسلام آباد یونائیٹڈ اسلام آباد، ترلائی اسلام آباد یونائیٹڈ
(علی نقوی اور آمنہ نقوی)
2015[ا] Flag of پاکستان شاداب خان Flag of پاکستان اظہر محمود
کراچی کنگز کراچی، سندھ اے آر وائی گروپ
(سلمان اقبال، سی ای او)
2015[ا] Flag of پاکستان بابر اعظم Flag of انگلستان پیٹر مورس
لاہور قلندرز لاہور، پنجاب، پاکستان قطر لوبریکینٹس کمپنی
(فواد رانا، ایم ڈی)
2015[ا] Flag of پاکستان شاہین آفریدی Flag of پاکستان عاقب جاوید
ملتان سلطانز ملتان، پنجاب، پاکستان علی خان ترین و عالمگیر خان ترین 2017[ب]
2018[پ]
Flag of پاکستان محمد رضوان Flag of زمبابوے اینڈی فلاور
پشاور زلمی پشاور، خیبر پختونخوا ہائیر پاکستان
(جاوید آفریدی، سی ای او)
2015[ا] Flag of سینٹ لوسیا وہاب ریاض Flag of سینٹ لوسیا ڈیرن سیمی
کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کوئٹہ، بلوچستان عمر ایسوسی ایٹس
(ندیم عمر ، ڈائریکٹر)
2015[ا] Flag of پاکستان سرفراز احمد Flag of پاکستان معین خان

گراؤنڈ[ترمیم]

نتائج[ترمیم]

سیزن نتائج[ترمیم]

سیزن ٹیموں کی تعداد فائنل گراؤنڈ سیریز کا بہترین کھلاڑی
فاتح مارجن دوسرے نمبر پر
2016
تفصیلات
5 اسلام آباد یونائیٹڈ
175/4 (18.4 اوور)
6 وکٹوں سے
Scorecard
کوئٹہ گلیڈی ایٹرز
174/7 (20 اوور)
دبئی بین الاقوامی کرکٹ اسٹیڈیم، دبئی Flag of انگلستان روی بوپارا (کراچی کنگز)
2017
تفصیلات
پشاور زلمی
148/6 (20 اوور)
58 اسکور سے
Scorecard
کوئٹہ گلیڈی ایٹرز
90 (16.3 اوور)
قذافی اسٹیڈیم، لاہور Flag of پاکستان کامران اکمل (پشاور زلمی)
2018
تفصیلات
6 اسلام آباد یونائیٹڈ
154/7 (16.5 اوور)
3 وکٹوں سے
Scorecard
پشاور زلمی
148/9 (20 اوور)
نیشنل اسٹیڈیم، کراچی، کراچی Flag of نیوزی لینڈ لیوک رونچی (اسلام آباد یونائیٹڈ)
2019
تفصیلات
کوئٹہ گلیڈی ایٹرز
139/2 (17.5 اوور)
8 وکٹوں سے
Scorecard
پشاور زلمی
138/8 (20 اوور)
Flag of آسٹریلیا شین واٹسن (کوئٹہ گلیڈی ایٹرز)
2020
تفصیلات
کراچی کنگز
135/5 (18.4 اوور)
5 وکٹوں سے
Scorecard
لاہور قلندرز
134/7 (20 اوور)
Flag of پاکستان بابر اعظم (کراچی کنگز)
2021
تفصیلات
ملتان سلطانز

206/4 (20 اوور)

47 اسکور سے
Scorecard
پشاور زلمی
159/9 (20 اوور)
شیخ زاید کرکٹ اسٹیڈیم، ابوظہبی Flag of پاکستان صہیب مقصود (ملتان سلطانز)

ٹیم کے نتائج[ترمیم]

سیریز
(ٹیموں کی تعداد)
2016
(5)
2017
(5)
2018
(6)
2019
(6)
2020
(6)
2021
(6)
مہمان نواز(s)
ٹیم
Flag of متحدہ عرب امارات Flag of متحدہ عرب امارات
Flag of پاکستان
Flag of متحدہ عرب امارات
Flag of پاکستان
Flag of متحدہ عرب امارات
Flag of پاکستان
Flag of پاکستان Flag of پاکستان
Flag of متحدہ عرب امارات
اسلام آباد یونائیٹڈ W (3rd) 4th (4th) W (1st) 3rd (3rd) 6th 3rd (1st)
کراچی کنگز 4th (4th) 3rd (3rd) 3rd (2nd) 4th (4th) W (2nd) 4th (4th)
لاہور قلندرز 5th 6th R (3rd) 5th
ملتان سلطانز Team did not exist 5th 3rd (1st) W (2nd)
پشاور زلمی 3rd (1st) W (1st) R (3rd) R (1st) 4th (4th) R (3rd)
کوئٹہ گلیڈی ایٹرز R (2nd) 4th (4th) W (2nd) 5th 6th
نوٹ
  • W = فاتح;
  • R = دوسرے نمبر پر;
  • (x) = لیگ گیمز ٹیبل پوزیشن کا اختتام;

امپائر و دیگر آفیشلز[ترمیم]

بین الاقوامی امپائر جوئل ولسن پاکستان سے علیم ڈار ,شوذب رضا ،احمد شهاب ،راشد ریاض ،خالد محمود اور احسن رضا اس لیگ میں امپائر کے فرائض سر انجام دیے۔سری لنکا کے روشن مہانامہ اور پاکستان کے محمد انیس میچ ریفریز تهے۔[9]

نشریات اور ڈیجیٹل تقسیم[ترمیم]

لیگ کے پہلے تین سیزن (2016-2018ء) کے لیے، سن سیٹ اور وائن کو آفیشل پروڈیوسرز کے طور پر پروڈکشن کے حقوق سے نوازا گیا تھا، اور پی ٹی وی سپورٹس ایچ ڈی، ٹین سپورٹس اور جیو سوپر کو پاکستان میں نشریاتی حقوق سے نوازا گیا تھا جس کے ساتھ پی سی بی نے عالمی ٹیلی ویژن کے حقوق فروخت کیے تھے۔ ٹیک فرنٹ، متحدہ عرب امارات کا ایک گروپ ہے۔ لیگ کا چوتھا، پانچواں اور چھٹا سیزن پاکستان میں جیو سپر اور پی ٹی وی اسپورٹس ایچ ڈی پر نشر کیا گیا۔

علاقہ سال چینل اور لائیو سٹریمنگ
Flag of Pakistan.svg پاکستان (2016–2023)
(2022–2023)
(2016–2021)
(2016–2018)
(2016–تاحال)
(2022–2023)
(2016–2021)
پاکستان ٹیلی ویژن نیٹ ورک
اے آر وائی ڈیجیٹل نیٹ ورک
جیو ٹی وی
ٹین سپورٹس
تپماد ٹی وی
دراز
جیو سپر
Flag of افریقی اتحاد افریقا:- (2022–2023) سپر سپورٹس
Flag of Australia.svg آسٹریلیا (2021–تاحال) فیس بک
تپماد ٹی وی
Flag of کیریبین کمیونٹی کیریبین:- (2022–2023) فلو سپورٹس
وسطی ایشیا:- (2021–تاحال) فیس بک
تپماد ٹی وی
مشرقی ایشیا:- (2021–تاحال) فیس بک
تپماد ٹی وی
Flag of یورپ یورپ:- (2021–تاحال) فیس بک
تپماد ٹی وی
Flag of Ireland.svg جمہوریہ آئرلینڈ (2022–2023) سکائی سپورٹس
Flag of مشرق وسطی اور شمالی افریقا مشرق وسطی (2021–تاحال) بین سپورٹس
تپماد ٹی وی
Flag of مشرق وسطی اور شمالی افریقا شمالی افریقہ:- (2021–تاحال) فیس بک
تپماد ٹی وی
شمالی امریکہ:- (2022–2023) ولو ٹی وی
شمالی ایشیا:- (2021–تاحال) فیس بک
تپماد ٹی وی
Flag of New Zealand.svg نیوزی لینڈ (2022–2023) سکائی سپورٹس
اوشیانا:- (2022–2023) جلد ہی اعلان کر رہے ہیں۔
Flag of جنوبی امریکہ جنوبی امریکہ:- (2021–تاحال) فیس بک
تپماد ٹی وی
جنوبی ایشیا:- (2022–2023)
(2022–2023)
سونی سیکس ایچ ڈی
سونی ٹین ایج ڈی

سونی لائیو
جنوب مشرقی ایشیا:- (2021–تاحال) فیس بک
تپماد ٹی وی
Flag of the United Kingdom.svg مملکت متحدہ (2022–2023) سکائی سپورٹس
Flag of the United Arab Emirates.svg متحدہ عرب امارات (2022–2023) ای لائف ٹی وی
مغربی ایشیا:- (2021–تاحال) فیس بک
تپماد ٹی وی
دنیا بھر میں ٹیلی ویژن کے حقوق (2016–2018) ٹیک فرنٹ
(2019–2021) بلٹز ایڈورٹائزنگ
(2022–2023) جلد ہی اعلان کر رہے ہیں۔
دنیا بھر میں انٹرنیٹ کے حقوق (2016–2020) ٹیک فرنٹ (معاہدہ منسوخ)
(2020) پاکستان سپر لیگ یوٹیوب پر
(2021–تاحال) فیس بک[10]
(2021–تاحال) تپماد ٹی وی

لیگ کے آپریشن کے پہلے تین سالوں کے اشتہارات کے حقوق پاکستانی کمپنی بلٹز ایڈورٹائزنگ کو دیے گئے۔[11]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Most runs in PSL". ESPNcricinfo. 
  2. "Most wickets in PSL". ESPNcricinfo. 
  3. کھیل - BBC Urdu - پاکستان سپر لیگ ملتوی کر دی گئی
  4. "Pakistan T20 League not to be underestimated - Lorgat". ESPN Cricinfo. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 12 جنوری 2013. 
  5. AFP (3 May 2016). "PCB reaps $2.6m profit from Pakistan Super League". دی ایکسپریس ٹریبیون. اخذ شدہ بتاریخ 21 فروری 2017. 
  6. Pakistan offers overseas players $2m life insurance | Cricket | ESPNcricinfo
  7. "آرکائیو کاپی". 19 جنوری 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 21 جنوری 2013. 
  8. Pakistan Super League: Indian players want to take part, says PCB official - The Express Tribune
  9. Koertzen, Proctor on board as PSL officials - Sport - DAWN.COM
  10. PSL. "HBL PSL 6 Live On Facebook". Pakistan Cricket Board. 
  11. PSL. "PCB has awarded the Media Advertising Rights for the first three seasons of HBL PSL". Pakistan Cricket Board. 

بیرونی روابط[ترمیم]