یہوواہ کے گواہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
یہوواہ کے گواہ
Jw headquart.jpg
واروک، نیویارک میں بین الاقوامی صدر دفتر
زمرہ بندی تثلیت کے انکاری، بحالیتی
حکمرانی انتظامیہ
ساخت مراتب وار
علاقہ عالمگیر
بانی چارلس ٹیز روسل
ابتدا 1870ء
پٹسبرگ، پنسلوانیا، ریاستہائے متحدہ امریکا
سے شاخ بائبل اسٹوڈینٹ موومنٹ
اجتماعات 119,485
اراکین 8.3 ملین
سرکاری ویب سائٹ www.jw.org

مسیحی فرقہ یہوواہ کے گواہ (Jehovah's Witnesses) دیگر مسیحی فرقوں کے عقائد کو نہیں مانتے۔ ان کے عقائد کے مطابق یسوع ایک نبی تھے اور خدا نہیں تھے۔ اور خدا (یہوواہ) ایک ہی ہے۔ ان کے مطابق یسوع مسیح کو سولی نہیں دی گئی۔یہ فرقہ 1870ء سے 1881ء کے درمیان واچ ٹاور سوسائٹی، امریکا میں قائم ہوا۔ 1931ء سے اس کے پیروکار خود کو ”یہوواہ کے گواہ“ کہنے لگ گئے۔ ان کے لیے خدا کا مناسب نام یہوواہ ہے۔

بنیادی عقائد[ترمیم]

ان کا دعویٰ ہے کہ ان کا ایمان صرف بائبل، اور مسیحیوں کی مقدس کتاب پر مبنی ہے۔ ان کے نزدیک تمام مذاہب، تمام دوسرے مسیحی فرقے ”خدا کی نہیں بلکہ شیطان کی خدمت“ کرتے ہیں۔ یہ تمام تر مذہبی اور ریاستی تعطیلات کو مسترد کرتے ہیں۔ خاندانی تقریبات میں بھی شریک نہیں ہوتے اور بعض کو مسترد کرتے ہیں۔ جیسے سالگرہ یا کرسمس، اسکول کی سالگرہ پارٹی، یا کمپنی کی کرسمس پارٹی میں وہ شرکت نہیں کرتے ان کے نزدیک یہ ایک بدعت ہے۔ یہاں تک کے یہوواہ کے گواہوں کو ”ملحد“ سے شادی کرنے کی اجازت نہیں یعنی ہم-فرقہ/مذہب ہونا ایک لازم شرط سمجھی جاتی ہے۔ یہوواہ کے گواہ توقع کرتے ہیں کہ دنیا جلد کافروں اور یہوواہ کے درمیان جنگ میں ختم ہوتے والی ہے۔ ان کے موت کے بعد کی زندگی کے خیالات مسیحیت اور اسلام سے کافی مختلف ہیں۔ صرف ان ہی کے لیے تین امکانات ہیں: تمام جو یہوواہ کے گواہ نہیں ہیں تباہ ہوجائیں گے۔ تقریباً تمام یہوواہ کے گواہ زمین پر زندہ رہیں گے۔ 144000 ان میں آسمان پر نبی یسوع مسیح کے ساتھ راج کریں گے۔

یہوواہ کے گواہ بائبل کا کچھ اور ترجمہ لیتے ہیں وہ نہیں جو گرجا گھر والے مسیحی لیتے ہیں۔ ان کا بائبل کا ترجمہ ”نیو ورلڈ ٹرانسلیشن“ ہے۔ اس میں بہت سے مقامات پر ترمیم کی گئی ہے تاکہ یہ یہوواہ کے گواہوں کے ایمان کے مطابق ہو۔ یہوواہ کے گواہ اس بات پر یقین نہیں کہ خدا یسوع مسیح کی شکل میں آدمی بن گیا۔ وہ صرف خداوند (یہوواہ) کی عبادت کرتے ہیں، یسوع مسیح اور روح القدس کے ماتحت ہیں۔ وہ خدا کی تین فارم کو مسترد کرتے ہیں۔ یہوواہ کے گواہ بالغوں اور نوجوانوں کو بپتسمہ دیتے ہیں، بچوں کو نہیں دیتے۔ ایک اور چرچ کی طرف سے ان پر بپتسمہ لاگو نہیں ہوتا۔ رات کا کھانا (ایکیرسٹ) سال میں صرف ایک بار ہے کوئی اس میں شراب اور روٹی نہیں لیتا۔ یہوواہ کے گواہوں کے خیال میں بائبل بہت سی چیزوں سے منع کرتی ہے جو دوسرے مسیحی درست سمجھتے ہیں۔ اس کے علاوہ خون کی منتقلی اور انسانی اعضاء کے عطیات سختی سے ممنوع ہیں۔ مثلاً یہوواہ کے گواہ حادثات میں مر جاتے ہیں کیونکہ ان کی تعلیمات خون کی منتقلی کی اجازت نہیں دیتی۔

صدر دفتر[ترمیم]

یہوواہ کے گواہوں کی بین الاقوامی انتظامیہ کا ہیڈکوارٹر واروک، نیویارک میں ہے۔ ان کو ”واچ ٹاور سوسائٹی“ کہا جاتا ہے۔ کمیونٹی بین الاقوامی سطح پر سخت منظم ہے۔ یہوواہ کے گواہوں کی بین الاقوامی جرمن انتظامیہ کا ہیڈکوارٹر فرینکفرٹ میں ہے۔ ان کے پاس پیشہ وارانہ مشنری ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  • Evangelische Zentralstelle für Weltanschauungsfragen — یہوواہ کے گواہ۔ مختصر ميں معلومات (کیتھولک اور متعلقہ مذہب کے مصلحین کے نمائندوں اور عالمی نظریے کے سوالات کے لیے ایک منصوبہ۔ یہوواہ کے گواہ)۔

بیرونی روابط[ترمیم]