بھارتیہ جنتا پارٹی کے وزرائے اعلی کی فہرست

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
  صوبے اور یونین علاقے جن کے وزرائے اعلیٰ بی جے پی سے ہیں
  صوبے اور یونین علاقے جن کے وزرائے اعلیٰ بی جے پی کے تھے
  صوبے اور یونین علاقے جن کے وزرائے اعلیٰ بی جے پی کے کبھی نہیں رہے
  وفاق کے زیر انتظام یونین علاقے

بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) بھارت کی دو اہم سیاسی جماعتوں میں سے ایک ہے۔ دوسری پارٹی انڈین نیشنل کانگریس (کانگریس) ہے۔[1][2] 2020ء میں بھارتی پارلیمان میں یہ پارٹی سب سے زیادہ نمائندگی کی حامل ہے۔[3] بھارتیہ جنتا پارٹی 1980ء میں وجود میں آئی اور آہستہ آہستہ بھارت کی سیاست میں اپنا قدم جمایا۔ یہ پارٹی دائیں بازو کی سیاست کرتی ہے۔[4] مئی 2018ء تک بی جے پی کے کل 43 لیڈر وزیر اعلی بنئ ہیں جن میں سے اس وقت (مارچ 2020ء تک) 13 اس عہدہ پر فائز ہیں۔ کچھ ریاستوں میں بی جے پی کی اتحادی جماعت کی حکومت ہے جیسے بہار، میگھالیہ، تمل ناڈو، سکم، میزورم اور ناگالینڈ۔

وزیر اعلیٰ بھارت کی ریاست اور یونین علاقہ کا سربراہ حکومت ہوتا ہے۔ آئین ہند کے مطابق گورنر ریاست کا سربراہ ہوتا ہے مگر درحقیقت ریاست کی مقننہ اور عاملہ کے تمام اختیارات وزیر اعلیٰ کے پاس ہوتے ہیں۔ ودھان سبھا کے انتخابات کے بعد گورنر سب سے زیادہ نشست حاصل کرنے والی جماعت یا اتحاد کو تشکیل حکومت کی دعوت دیتا ہے۔ گورنر ہی وزیر اعلیٰ نامزد کرتا ہے۔ وزیر اعلیٰ اپنی کابینہ کے ساتھ مجموعی طور پر اسمبلی کو جوابدہ ہوتا ہے اور اسمبلی میں تائید ملنے کے بعد وزیر اعلیٰ اگلے 5 برس کے لیے سربراہ حکومت بن جاتا ہے۔[5]

43 وزرائے اعلیٰ میں سے فی الحال 11 اس عہدہ پر فائز ہیں۔ ان میں سربانند سونووال آسام میں، پرمود ساونت گوا میں، وجے روپانی گجرات میں، منوہر لال کھٹر ہریانہ میں، جے رام ٹھاکر ہماچل پردیش میں، بی ایس یدی یورپا کرناٹک میں، این بیرین سنگھ منی پور میں، بپلب کمار دیب تریپورہ میں، تریویندر سنگھ راوت اترا کھنڈ میں اور یوگی آدتیہ ناتھ اترپردیش میں۔ بی جے پی کی طرف سے اب تک کل 4 خواتین وزیر اعلیٰ ہوئی ہیں، سشما سوراج دہلی میں، اوما بھارتی مدھیہ پردیش میں، آنندی بین پٹیل گجرات میں اور وسوندھرا راجے راجستھان میں۔ رمن سنگھ چھتیس گڑھ کے وزیر اعلیٰ تھے جنھوں نے مسلسل 3 مرتبہ اس عہدہ پر رہ کر بی جے پی کی طرف سے سب سے زیادہ مدت تک وزیر اعلیٰ بننے کا شرف حاصل کیا۔ وہ 2003ء تا 2018ء اس عہدہ پر رہے۔ دیویندر فرنویس 2 مرتبہ مہاراشٹر کے وزیر اعلیٰ رہے۔ دوسری مرتبہ وہ محض 3 دنوں کے لیے وزیر اعلیٰ رہ پائے اس کے بعد ان کی حکومت گر گئی۔ کم مدت کے لحاظ سے فڈنویس کا نام آتا ہے۔ اگر کل مدت کی بات کریں تو سشما سوراج کا نام آتا ہے جو محض 52 دنوں تک دہلی کی وزیر اعلیٰ رہ پائی تھیں۔ بی جے پی کے وجود میں آنے کے بعد بھیروں سنگھ شیخاوت سب سے پہلے وزیر اعلیٰ بنے۔ مگر اس کے کئی لیڈر پارٹی کے بننے سے پہلے بھارتیہ جن سنگھ کی حمایتی جنتا پارٹی میں رہتے ہوئے وزیر اعلیٰ رہ چکے تھے۔[6] گجرات اور اتراکھنڈ میں بی جے پی کے 5 وزرائے اعلیٰ رہے ہیں۔ نیز مدھیہ پردیش اور اترپردیش میں 4، دہلی، گوا، ہماچل پریش اور کرناٹک میں 3 وزرائے اعلیٰ ہوئے ہیں۔

بھارتیہ جنتا کے پارٹی وزرائے اعلیٰ[ترمیم]

اشارہ
  • *  – برسرعہدہ وزیر اعلیٰ
ریاست نام تصویر مدت(s) کل مدت (دن) مدت کی وضاحت
اروناچل پردیش , گیگونگ اپانگگیگونگ اپانگ [lower-greek 1] Gegong Apang.jpg 1 364 31 اگست 200329 اگست 2004
(364)
, پیما کھانڈوپیما کھانڈو *[lower-greek 2] Pema Khandu in July 2016.jpg 1 1753 31 دسمبر 2016 – تاحال
(1753)
آسام , سربانند سونووالسربانند سونووال * Sarbananda Sonowal 1 1974 24 مئی 2016 – تاحال
(1974)
چھتیس گڑھ , رمن سنگھرمن سنگھ The former Chief Minister of Chhattisgarh, Dr. Raman Singh.jpg 3 5488 7 دسمبر 2003 – 16 دسمبر 2018
(5488)
دہلی , مدن لال کھورانامدن لال کھورانا Madan Lal Khurana.jpg 1 816 2 دسمبر 199326 فروری 1996
(816)
, صاحب سنگھ ورماصاحب سنگھ ورما The Union Labour Minister Dr. Sahib Singh chairing the 165th Meeting of the CBT, Employees Provident Fund in New Delhi on December 3, 2003 (Wednesday) (cropped).jpg 1 959 26 فروری 199612 اکتوبر 1998
(959)
, سشما سوراجسشما سوراج Sushma Swaraj - 2018 (45124842302) (cropped).jpg 1 52 12 اکتوبر 19983 دسمبر 1998
(52)
گووا , منوہر پاریکرمنوہر پاریکر The official photograph of the Union Minister for Defence, Shri Manohar Parrikar.jpg 3 4228 12 اکتوبر 20002 فروری 2005
(1574)
9 مارچ 20128 نومبر 2014
(974)
14 مارچ 201717 مارچ 2019
(733)
, لکشمی کانت پارسیکرلکشمی کانت پارسیکر Laxmikant Parsekar.jpg 1 857 8 نومبر 201414 مارچ 2017
(857)
, پرمود ساونتپرمود ساونت * The Chief Minister of Goa, Shri Pramod Sawant.jpg 1 945 19 مارچ 2019 – تاحال
(945)
گجرات (بھارت) , کیشو بھائی پٹیلکیشو بھائی پٹیل Keshubhai Patel.jpg 2 1407 19 مئی 199521 اکتوبر 1995
(155)
4 مئی 19987 اکتوبر 2001
(1252)
, سریش مہتاسریش مہتا 1 272 21 اکتوبر 199519 جولائی 1996
(272)
, نریندر مودینریندر مودی Prime Minister of India Narendra Modi.jpg 4 4610 7 اکتوبر 200122 مئی 2014
(4610)
, آنندی بین پٹیلآنندی بین پٹیل Anandiben Patel Sept 2014.jpg 1 808 22 مئی 20147 اگست 2016
(808)
, وجے روپانیوجے روپانی * Vijay Rupani.jpg 1 1899 7 اگست 2016 – تاحال
(1899)
ہریانہ , منوہر لال کھٹرمنوہر لال کھٹر * Manohar Lal Khattar 2015.jpg 2 2550 26 اکتوبر 2014 - تاحال
(2550)
ہماچل پردیش , شانتا کمارشانتا کمار [lower-greek 3] Shanta Kumar.jpg 1 1016 5 مارچ 199015 دسمبر 1992
(1016)
, پریم کمار دھوملپریم کمار دھومل Prem Kumar Dhumal.jpg 2 3783 24 مئی 19986 مارچ 2003
(1747)
30 مئی 200725 دسمبر 2012
(2036)
, جے رام ٹھاکرجے رام ٹھاکر * 1 1392 27 دسمبر 2017 – تاحال
(1392)
جھارکھنڈ , بابو لال مرانڈیبابو لال مرانڈی 1 853 15 نومبر 200018 مارچ 2003
(853)
, ارجن منڈاارجن منڈا Arjun Munda 8992.JPG 3 2276 18 مارچ 20032 مارچ 2005
(715)
12 مارچ 200518 ستمبر 2006
(555)
11 ستمبر 201013 جون 2013
(1006)
, رگھوبر داسرگھوبر داس Raghuvar Das.jpg 1 1827 28 دسمبر 201429 دسمبر 2019
(1827)
کرناٹک , بی ایس یدی یورپابی ایس یدی یورپا * The Chief Minister of Karnataka, Shri B.S. Yediyurappa.jpg 4 1992 11 نومبر 200720 نومبر 2007
(9)
30 مئی 20084 اگست 2011
(1161)
17 مئی 201823 مئی 2018
(6)

26 جولائی 2019 – تاحال
(816)

, ڈی وی سدانند گوڑاڈی وی سدانند گوڑا Sadananda Gowda.jpg 1 313 4 اگست 201112 جون 2012
(313)
, جگدیش شیٹرجگدیش شیٹر Jagadish Shettar.jpg 1 335 12 جون 201213 مئی 2013
(335)
مدھیہ پردیش[lower-greek 4] , سندر لال پٹواسندر لال پٹوا [lower-greek 5] 1 1016 5 مارچ 199015 دسمبر 1992
(1016)
, اوما بھارتیاوما بھارتی Uma Bharati in 2014.jpg 1 259 8 دسمبر 200323 اگست 2004
(259)
, بابو لال غوربابو لال غور Babulal gaur.jpg 1 463 23 اگست 200429 نومبر 2005
(463)
, شیوراج سنگھ چوہانشیوراج سنگھ چوہان Shivraj Singh Chauhan (cropped).jpg 3 4765 29 نومبر 200516 دسمبر 2018
(4765)
مہاراشٹر , دیویندر فرنویسدیویندر فرنویس Devendra fadnavis.png 2 1837 31 اکتوبر 20148 نومبر 2019
(1834)
23 نومبر 201926 نومبر 2019
(3)
منی پور , این بیرین سنگھاین بیرین سنگھ * N. Biren Singh.jpg 1 1679 15 مارچ 2017 – تاحال
(1679)
راجستھان , بھیروں سنگھ شیخاوتبھیروں سنگھ شیخاوت [lower-greek 6] BS Shekhawat (cropped).jpg 2 2840 4 مارچ 199015 دسمبر 1992
(1017)
4 دسمبر 19931 دسمبر 1998
(1823)
, وسوندھرا راجےوسوندھرا راجے Vasundhra Raje.jpg 2 3666 8 دسمبر 200318 دسمبر 2008
(1837)
13 دسمبر 2013 – 16 دسمبر 2018
(1829)
تریپورہ , بپلب کمار دیببپلب کمار دیب *
Biplab Kumar Deb
1 1320 9 مارچ 2018 – تاحال
(1320)
اتراکھنڈ , نتیانند سوامینتیانند سوامی 1 355 9 نومبر 200030 اکتوبر 2001
(355)
, بھگت سنگھ کوشیاریبھگت سنگھ کوشیاری 1 123 30 اکتوبر 20012 مارچ 2002
(123)
, بی سی کھنڈویبی سی کھنڈوی 2 1027 8 مارچ 200728 جون 2009
(843)
11 ستمبر 201113 مارچ 2012
(184)
, رمیش پوکھریالرمیش پوکھریال 1 805 28 جون 200911 ستمبر 2011
(805)
, تریویندر سنگھ راوتتریویندر سنگھ راوت * TrivendraSinghRawat.jpg 1 1676 18 مارچ 2017 – تاحال
(1676)
اتر پردیش , کلیان سنگھکلیان سنگھ Kalyan Singh1.jpg 3 1311 24 جون 19916 دسمبر 1992
(531)
21 ستمبر 199721 فروری 1998
(153)
23 فروری 199812 نومبر 1999
(627)
, رام پرکاش گپتارام پرکاش گپتا 1 351 12 نومبر 199928 اکتوبر 2000
(351)
, راجناتھ سنگھراجناتھ سنگھ Rajnath.jpg 1 496 28 اکتوبر 20008 مارچ 2002
(496)
, یوگی آدتیہ ناتھیوگی آدتیہ ناتھ * Yogi Adityanath.jpg 1 1675 19 مارچ 2017 – تاحال
(1675)

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Edward A. Gargan (29 نومبر 1993). "India's Two Major Political Parties Stumble in Regional Elections". نیو یارک ٹائمز. 1 نومبر 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 2 اگست 2013. 
  2. "In Numbers: The Rise of BJP and decline of Congress". 5 نومبر 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  3. "Sixteenth Lok Sabha". لوک سبھا. 18 اکتوبر 2015 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 23 اگست 2015. 
  4. Sagarika Dutt (12 نومبر 2006). India in a Globalised World. Manchester University Press. صفحہ 64. ISBN 978-1-84779-214-3. 3 مارچ 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2013. BJP is a right wing party and gives priority to the unity of the country. 
  5. Durga Das Basu (1960). Introduction to the Constitution of India (ایڈیشن 20th). LexisNexis Butterworths Wadhwa Nagpur. صفحات 241, 245. ISBN 978-81-8038-559-9. 
  6. "Janata Party merged with the Bhartiya Janata Party (BJP)". jagranjosh.com. 12 اگست 2013. 12 نومبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 12 نومبر 2013. 
  7. ^ ا ب پ ت ٹ ث ج چ "States of India since 1947". worldstatesmen.org. 18 جون 2008 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 2 اگست 2013. 
  8. ^ ا ب "Apang back in Cong fold". دی اکنامک ٹائمز. 29 اگست 2004. اخذ شدہ بتاریخ 2 اگست 2013. 
  9. "BJP bags its first NE state". The Economic Times. 31 اگست 2003. اخذ شدہ بتاریخ 2 اگست 2013. 
  10. "Congress stalwart Gegong Apang joins BJP". Times Of India. 20 فروری 2014. 4 مارچ 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 3 مارچ 2015. 
  11. "Arunachal veteran Gegong Apang joins Devegowda's JD(S)". Business Standard. 21 فروری 2019. اخذ شدہ بتاریخ 24 مئی 2019. 
  12. ^ ا ب "BJP joins Pema Khandu's government in Arunachal Pradesh". ریڈف ڈاٹ کوم. 14 اکتوبر 2016. 1 جنوری 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 دسمبر 2016. 
  13. "BJP forms government in Arunachal Pradesh with 33 PPA MLAs joining it". The Economic Times. 31 دسمبر 2016. 1 جنوری 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 دسمبر 2016. 

بیرونی روابط[ترمیم]