مندرجات کا رخ کریں

عبید اللہ بن یزید کلبی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے

عبیداللہ بن یزید بن ثبیط قیسی شہدائے کربلا میں سے ہیں اور 10 محرم 61ھ روز عاشورا یزیدی فوج سے لڑتے ہوئے شہید ہوئے ۔

یزید بن ثبیط کے دس بیٹے تھے چنانچہ انھوں نے دسوں کے سامنے نصرتِ حسین علیہ السلام کا سوال پیش کیا لیکن ان میں سے صرف دو تھے جنھوں نے اس اہم ارادہ میں باپ کا ساتھ دیا۔ان ہی دو میں ایک عبیداللہ اور دوسرے عبد اللہ بن یزید کلبی تھے۔چنانچہ وہ اپنے والد کی ھمراھی میں بصرہ سے نکلے اور مقامِ ابطح پر پہنچ کر خدمتِ امام (ع) میں حاضر ھوئے.روزِ عاشور حملہ اولٰی میں شہید ھوئے.[1]


مزید دیکھیے

[ترمیم]

حوالہ جات

[ترمیم]