میمون بن مہران

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

میمون بن مہران الرقی ان کی کنیت ابو ایوب ہے۔ کبار علما اور ائمہ میں شمار ہوتا ہے۔ بنو نصر بن معاویہ سے ایک عورت نے انھیں کوفہ میں آزاد کرایا تھا، پھر وہیں پلے بڑھے پھر بعد میں الرقہ چلے گئے اور وہیں مقیم رہے، انہیں عمر بن عبدالعزیز نے انھیں وہاں کا گورنر بنا دیا۔ جب 107ھ (725ء-726ء) میں قبرص پر حملہ ہوا تو معاویہ بن ہشام بن عبد الملک کے ساتھ فوج کے قائدین میں سے تھے۔ ان کی وفات 116ھ یا 117 ھ میں ہوئی۔[1][2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. د۔ عبد السلام الترمانيني، " أحداث التاريخ الإسلامي بترتيب السنين: الجزء الأول من سنة 1 هـ إلى سنة 250 هـ"، المجلد الثاني (من سنة 132 هـ إلى سنة 250 هـ) دار طلاس ، دمشق۔
  2. عبد الوهاب الشعراني - الطبقات الكبرى - ج 1 ص 40
Midori Extension.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔