ابان بن عثمان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

ابان بن عثمان (عربی: أبان بن عثمان بن عفان الأموي القرشي) ابان بن عثمان بن عفان بن ابو العاص بن امیہ بن عبد شمس اموی قریشی، آپ کی والدہ عمرو بنت جندب بن عمرو دوسی ہیں،کنیت ابو سعید۔ آپ کی جائے پیدائش ووفات مدینہ منورہ ہے، کبار تابعین میں آپ کا شمار ہوتاہے،جنگ جمل میں عائشہ رضی اللہ عنہا کا ساتھ دیا، مدینہ کے دس فقہا میں سے ایک ہیں ،بہت کم احادیث آپ سے مروی ہیں،سیرت نبوی کے موضوع پر سب سے پہلے انہوں نے ہی لکھا،ان کی کتاب المغازی عہد اسلام کی قدیم کتب میں شمار ہوتی ہے۔ عبدالملک بن مروان کے زمانے میں83-76ھ تک مدینہ منورہ کے گورنر رہے۔83ھ میں معزول ہوے۔ بقیہ زندگی امارت وسیاست سے دور رہے،علم کے لیے اپنے آپ کو پوری طرح سے فارغ کرلیا تھا۔آخر عمر میں آپ کو فالج ہوگیا،اورتھوڑا سا بھراپن آگیاتھا۔سن 105ھ میں آپ کا انتقال ہوگیا۔[1][2][3][4]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. [تاريخ أمراء المدينة المنورة ص84 ـ التاريخ الشامل للمدينة المنورة ج1/388]
  2. الطبقات الكبرى
  3. الوافي بالوفيات
  4. روئے خط