ابن خلدون

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
ابن خلدون
عبد الرحمن ابن خلدون
Ibn Khaldoun.jpg
پیدائش 27 مئی 1332 ء / 732 ھ تیونس
وفات 19 مارچ 1406 ء / 808 ھ قاہرہ
عہد عہد وسطی
علاقہ المغرب
مکتب فکر مالکی مذہب
شعبہ عمل
تاریخ، معاشریات، معاشیات
اہم نظریات
عصبیہ
Ibn Khaldun.jpg

پیدائش؛ 1332ء وفات؛ 1406ء ابن خلدون مورخ، فقیہ ، فلسفی اور سیاستدان۔ مکمل نام ابوزید عبدالرحمن بن محمد بن محمد بن خلدون ولی الدین التونسی الحضرمی الاشبیلی المالکی ہے [1]۔ تیونس میں پیدا ہوا۔ اور تعلیم سے فراغت کے بعد تیونس کے سلطان ابوعنان کا وزیر مقرر ہوا۔ لیکن درباری سازشوں سے تنگ آکر حاکم غرناطہ کے پاس چلا گیا۔ یہ سر زمین بھی راس نہ آئی تو مصر آگیا۔ اور الازھر میں درس و تدریس پر مامور ہوا۔ مصر میں اس کو مالکی فقہ کا منصب قضا میں تفویض کیا گیا۔اسی عہدے پر وفات پائی۔ ابن خلدون کو تاریخ اور عمرانیات کا بانی تصور کیا جاتا ہے۔ اس نے العبر کے نام سے ہسپانوی عربوں کی تاریخ لکھی تھی جو دو جلدوں میں شائع ہوئی۔ لیکن اس کا سب سے بڑا کارنامہ۔ مقدمتہ فی التاریخ ہے جو مقدمہ ابن خلدون کے نام سے مشہور ہے۔ یہ تاریخ، سیاست ، عمرانیات ، اقتصادیات اور ادبیات کا گراں مایہ خزانہ ہے۔

مقدمہ اور تاریخ ابن خلدون کا اردو ترجمہ[ترمیم]

اردو میں مقدمہ ابن خلدون کا ترجمہ معروف ادیب اور شاعر مرحوم ابوالخیر کشفی نے کیا ہے۔ اسے دار الاشاعت اردو بازار کراچی نے شائع کیا ہے۔ ترجمہ 534 صفحات پر مشتمل ہے۔ اس کے علاوہ مولانا راغب رحمانی نے بھی ترجمہ کیا ہے جسے نفیس اکیڈمی نے شائع کیا ہے۔

بیرونی روابط[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]