ادریس بتلیسی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مولانا  ویکی ڈیٹا پر (P511) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ادریس بتلیسی
(کردی میں: ئیدریسی بەدلیسی ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
İdris-i Bitlisi.png
 

معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1452  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بتلیس  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات سنہ 1520 (67–68 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
استنبول  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدفن قبرستان ایوب  ویکی ڈیٹا پر (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ مؤرخ،  مترجم،  مصنف،  سیاست دان،  شاعر،  خطاط  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادری زبان کردی زبان  ویکی ڈیٹا پر (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان فارسی،  کردی زبان،  عربی،  عثمانی ترکی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل تاریخ،  عربی شاعری  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

مولانا حکیم الدین ادریس مولانا حسام الدين علی البتلیسی (1455ء - 15 نومبر 1520ء) جن کو عام طور پر ادریس بتلیسی کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔ ادریس بتلیسی، عثمانی کرد مذہبی عالم اور بتلیس (جدید ترکی میں) کے منتظم تھے۔[1] ادریس بتلیسی کے اصل پیدائش کے بارے میں کچھ تنازع ہے کچھ مرّخیں کا کہنا ہے کہ دیار بکر اصل جگہ ہے۔ انہوں نے فارسی زبان میں ایک بڑا ادبی کام لکھا جس کا نام ہشت بہشت تھا، جو سن 1502ء میں شروع ہوا تھا اور اس میں پہلے آٹھ عثمانی حکمرانوں کے دور حکومت کا احاطہ کیا گیا تھا۔[2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Idrisi Bitlisi kimdir". 
  2. Spuler, Bertold, 1911-1990. (2003). Persian historiography and geography : Bertold Spuler on major works produced in Iran, the Caucasus, Central Asia, India, and early Ottoman Turkey. Marcinkowski, M. Ismail (Muhammad Ismail), 1964- (ایڈیشن 1st ed). Singapore: Pustaka Nasional. صفحات pp 68. ISBN 9971-77-488-7. OCLC 69672164.