بھارت میں سیاحت

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اروناچل پردیش میں ایک درہ

سیاحت بھارتی اقتصاد کا ایک اہم جز ہے۔ عالمی تنظیم ورلڈ ٹریول اینڈ ٹورازم کونسل کے مطابق بھارت میں سیاحت سے بھارتی قومی خزانے کو 8.31 لاکھ کروڑ روپیہ (120 ارب امریکی ڈالر) کا فائدہ ہوا۔ سیاحت سے 37 ملین سے بھی زائد لوگوں کو کام کے مواقع فراہم ہوئے۔ سالانہ سیاحت کا شعبہ متوسط 7 اعشاریہ 5 فیصد ترقی کرتا رہا ہے۔ بھارت کی خالص قومی پیداوار میں اندازہ لگایا گیا ہے کہ 2025ء تک سیاحت کی وجہ سے سرکاری خزانے کو 270 بلین امریکی ڈالر کا فائدہ پہنچے گا۔ اس کے علاوہ 2014ء میں 184,298 لوگوں نے علاج کے لیے بھارت کا رخ کیا۔

اپریل 2016ء میں غیر ملکی سیاحوں کی آمد میں سال 2015ء کے مقابلے 10.7 فیصد کا اِضافہ ہوا۔ غیر ملکی سیاحوں کی آمد کے لحاظ سے بنگلہ دیش سرفہرست ہے۔ سب سے زیادہ سیاح بنگلہ دیش سے ہندوستان آئے۔ اس کے بعد امریکا اور برطانیہ دوسرے اور تیسرے نمبر پر ہیں۔ اپریل 2016 میں سیاحت کے شعبے کے ذریعہ 11637 کروڑ روپے کی آمدنی غیر ملکی زر مبادلہ سے حاصل ہوئی۔

بھارتی ریاستوں میں سب سے زیادہ سیاح تمل ناڈو،مہاراشٹر،اتر پردیش،دہلی،راجستھان،مغربی بنگال،کیرالہ،بہار،کرناٹک اور ہریانہ آئے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]