مندرجات کا رخ کریں

سعد بن ایاس شیبانی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
سعد بن ایاس شیبانی
معلومات شخصیت
پیدائشی نام سَعْد بن إِيَاس
تاریخ وفات سنہ 713ء   ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش کوفہ   ویکی ڈیٹا پر (P551) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کنیت أَبو عَمْرو
عملی زندگی
طبقہ كبار التابعين
نسب البكري الشيباني
ابن حجر کی رائے ثقة
ذہبی کی رائے ثقة
نمایاں شاگرد ابو طلحہ اسدی ،  اسماعیل بن ابی خالد ،  سلیمان بن مہران الاعمش ،  سلیمان بن طرخان تیمی ،  ابو اسحٰق سبیعی   ویکی ڈیٹا پر (P802) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ محدث   ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عسکری خدمات
لڑائیاں اور جنگیں قادسیہ کی لڑائی   ویکی ڈیٹا پر (P607) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

سعد بن ایاس ابو عمرو شیبانی الکوفی [1] آپ کوفہ کے تابعی ،محدث ، [2] اور حدیث نبوی کے راویوں میں سے ایک ہیں۔

سیرت

[ترمیم]

بنو شیبان بن ثعلبہ بن عقبہ بن صاب بن علی بن بکر بن وائل سے آپ بکری شیبانی ہیں۔ آپ نے زمانہ جاہلیت کو محسوس کیا اور آپ اسلام قبول کر کے صحابی بن گے، حافظ ذہبی نے سیر اعلام النبلاء میں ان کا تذکرہ کیا ہے "ابو عمرو الشیبانی، جس کا نام سعد بن ایاس الکوفی ہے، بنو شیبان بن ثعلبہ بن عکابہ سے ہیں۔آپ نے قبل از اسلام کے زمانے کا ادراک کیا، اسلام قبول کیا اور صحابی بن گے " اور الخطیب البغدادی نے اپنی کتاب (اسی طرح کے اعداد و شمار کا خلاصہ) میں کہا، "ابو عمرو الشیبانی سعد بن ایاس، تابعین میں شمار ہوتے ہیں۔ اہل کوفہ۔"کہا جاتا ہے کہ اس نے نبی کو دیکھا لیکن ان سے سنا نہیں اور کہا گیا کہ اس نے نبی کو نہیں دیکھا اور ان کا شمار تابعین میں ہوتا ہے۔ وہ ابن مسعود کے ساتھ تھے اور ان کی صحبت کے لیے مشہور تھے، انھوں نے قادسیہ کی جنگ دیکھی اور ایک سو بیس سال زندہ رہے۔ جب میں کذیمہ میں اونٹ چرا رہا تھا۔ قادسیہ کے دن میری عمر چالیس سال تھی۔ وہ جامع مسجد میں قرآن کی تلاوت کرتے تھے۔ آپ کوفہ میں رہتے تھے، وہاں کے لوگوں کے ایک گروہ نے آپ سے روایت کی ہے۔آپ کی وفات سنہ 95 ہجری میں ہوئی۔

روایت حدیث

[ترمیم]

جبلہ بن حارثہ کلبی، حذیفہ بن یمان، زید بن ارقم، عبد اللہ بن مسعود، ابو مسعود عقبہ بن عمرو الانصاری اور علی بن ابی طالب رضی اللہ عنہم سے روایت ہے۔ اس کی سند سے روایت ہے: اسماعیل بن ابی خالد، حارث بن شبیل،حسن بن عبید اللہ نخعی، سلمہ بن کہیل، سلیمان اعمش، سلیمان بن ترخان تیمی، ابو فروہ عروہ بن الثانی حارث حمدانی، ابو معاویہ عمرو بن عبد اللہ بن وہب نخعی اور ابو اسحاق سبیعی عیسیٰ بن عبد الرحمٰن السلمی، مسلم الباطن، منصور بن معتمر اور ولید بن عیزار۔ اور ابو طلحہ الاسدی۔ [4]

جراح و تعدیل

[ترمیم]

یحییٰ بن معین نے کہا: ثقہ۔ ہیبۃ اللہ ابن حسن الطبری نے کہا: اس کے ثقہ ہونے پر اجماع ہے، محدثین کی جماعت نے ان سے روایت کی ہے۔ [2]

وفات

[ترمیم]

آپ نے 95ھ میں وفات پائی ۔

حوالہ جات

[ترمیم]
  1. الذهبي (1982)۔ سير أعلام النبلاء الجزء الرابع (PDF) (الثاني ایڈیشن)۔ مؤسسة الرسالة۔ صفحہ: 173 
  2. ^ ا ب أبي بكر أحمد بن علي الخطيب البغدادي (2003)۔ تلخيص المتشابه في الرسم وحماية ما أشكل منه عن بوادر التصحيف والوهم۔ دار الكتب العلمية۔ صفحہ: 505۔ 16 جولا‎ئی 2023 میں اصل سے آرکائیو شدہ 
  3. سانچہ:استشهاد بويكي بيانات
  4. سير أعلام النبلاء، بقية الطبقة الأولى من كبراء التابعين، أبو عمرو الشيباني، جـ 4، صـ 173، 174 آرکائیو شدہ 2018-01-28 بذریعہ وے بیک مشین