حمیرا چنا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
حمیرا چنا
Humaira Channa
پیدائشی نامحمیرا چنا
تعلقلاہور، پاکستان
اصناففلم پس پردہ گلوکار، لوک موسیقی گلوکاری
پیشےگلوکارہ
آلاتگلوکاری
سالہائے فعالیت1987-تاحال

حمیرا چنا چھ مرتبہ نگار ایوارڈز یافتہ پاکستانی پس پردہ گلوکارہ ہے۔

22جون 1970 کو حیدرآباد میں گلوکارہ لکی ناز کے گھر جنم لیا، استاد بشیر احمد خان اور نثار بزمی سے گلوکاری سیکھی ، ہزاروں گانے فلموں اور ڈراموں کے لیے گائے، ان کو پلے بیک سنگر کے اعتراف میں 6 بار  نگار ایوارڈ سے نوازا گیا۔ حمیرا چنا نے نور جہان اور مہناز کے بعد تیسرے نمبر پر سب سے زیادہ نگار ایوارڈ جیتے ہیں۔

ابتدائی زندگی اور کیریئر[ترمیم]

حمیرا چنا پاکستانی تفریح انڈسٹری میں اپنے والد کے زیر اثر شامل ہوئیں، ان کے والد فلمیں بناتے تھے۔ حمیرا چنا نے 9 سال کی عمر میں اپنے گانے گائے [1]۔ والد کی فلم کے لیے پہلا گانا گایا۔ پی ٹی وی کراچی اسٹیشن پر حمیرا چنا کو صوفی شاہ عبد الطیف بھٹائی کے کلام پر فوک گیت گانے کا موقع ملا۔ حمیرا چنا نے اردو، پنجابی، سرائیکی اور سندھی زبان میں ڈھیروں گانے گائے۔ حمیرا چنا کا عروج نوے کی دہائی میں ہوا، 2017 تک حمیرا چنا ایک ہزار سے زائد گانے گا چکی تھیں۔

اسی کی دہائی میں حمیرا چنا ناہید اختر کی جگہ گانے کے لیے آئی جب ناہید اختر نے شادی کے بعد پاکستان فلم انڈسٹری سے ریٹائرمنٹ لے لی۔ 2017 میں بہت سے پس پردہ گلوکاروں نے شکایت کی کہ انہیں نئے گلوکاروں اور پاپ گلوکاروں اور بینڈ کی وجہ سے کام نہیں مل رہا۔ کوک اسٹوڈیو پاکستان نے 2017 میں مایہ ناز پس پردہ گلوکاروں کو گانے کا موقع فراہم کیا جس میں حمیرا چنا نے بھی حصہ لیا [2] [3]۔

حمیرا چنا نے متعدد ممالک میں جا کر موسیقی کے پروگرام کیے ہیں جن میں امریکہ، کینیڈا، متحدہ عرب امارات، بنگلہ دیش اور یورپی ممالک شامل ہیں [4] ۔

ٹی وی[ترمیم]

سلور جوبلی، انور مقصود کے ساتھ پی ٹی وی تفریحی شو (1983)

حمیرا چنا نے کئی ڈراموں کے ٹائٹل گانے گائے جن میں سے چند یہ ہیں: رشتے محبتوں کے - ہم ٹی وی (2009) شکن - پی ٹی وی (2010) کاش ایسا ہو - اے آر ٹی وی (2013) ناگن - جیو کہانی (2017)

کوک اسٹوڈیو پاکستان[ترمیم]

  • 2014 میں امبوا تلے جاوید بشیر اور میکال حسن بینڈ کے ساتھ گایا [1]
  • 2014 میں پھول بنرو عباس علی خان کے ساتھ گایا
  • 02017 میں نبیل شوکت کے ساتھ مجھ سے پہلی سی محبت میرے محبوب نہ مانگ گایا [1]

ایوارڈ اور اعزازات[ترمیم]

  • 1986 میں نگار ایوارڈ برائے بہترین پس پردہ گلوکارہ [5]
  • 1989میں نگار ایوارڈ برائے بہترین پس پردہ گلوکارہ
  • 1991میں نگار ایوارڈ برائے بہترین پس پردہ گلوکارہ
  • 1993میں نگار ایوارڈ برائے بہترین پس پردہ گلوکارہ
  • 1994 میں نگار ایوارڈ برائے بہترین پس پردہ گلوکارہ
  • 1997 میں نگار ایوارڈ برائے بہترین پس پردہ گلوکارہ
  • 2017 میں صدر کی طرف سے پرائیڈ آف پرفارمنس [6]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ Adnan Lodhi (11 June 2017). "The fading out of Lollywood's iconic playback singers". The Express Tribune (newspaper). اخذ شدہ بتاریخ 18 ستمبر 2019. 
  2. Faizan Javed (11 February 2018). "Mystical music festival in full swing". The Nation (newspaper). اخذ شدہ بتاریخ 18 ستمبر 2019. 
  3. Shahzeb Shaikh (6 October 2015). "The future of classical music doesn't look good in Pakistan: Humera Channa". Dawn. Pakistan. اخذ شدہ بتاریخ 18 ستمبر 2019. 
  4. Profile of Humaira Channa on Coke Studio (Pakistan) website Retrieved 18 September 2019
  5. "Pakistan's 'Oscars': The Nigar Awards (scroll down to read 6 Nigar Awards for Humaira Channa)". FilmReviews website. 24 November 2017. اخذ شدہ بتاریخ 02 دسمبر 2020. 
  6. Sarmad Khoosat to receive 'Pride of Performance' Award (includes award for Humaira Channa) Pakistan Today (newspaper), Published 15 August 2016, Retrieved 2 December 2020

بیرونی روابط[ترمیم]