رشید ملک

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
رشید ملک
پیدائش 1924ء
گجرات، برطانوی ہندوستان (موجودہ پاکستان)
وفات فروری 20، 2007(2007-02-20)ءپاکستان
قلمی نام رشید ملک
پیشہ ادیب، محقق، مترجم، موسیقی کی تاریخ کے ماہر
زبان اردو
نسل پنجابی
شہریت Flag of پاکستانپاکستانی
اصناف علم موسیقی، ترجمہ، تحقیق
نمایاں کام امیر خسرو کا علم موسیقی اور دوسرے مقالات
جرائم اور مجرم
موسیقی کے فارسی مآخذ
مسائل موسیقی اور راگ درپن
اہم اعزازات صدارتی اعزاز برائے حسن کارکردگی

رشید ملک (پیدائش: 1924ء - وفات: 20 فروری، 2007ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے اردو کے ممتاز ادیب، محقق، مترجم، موسیقی کی تاریخ کے ماہر تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

رشید ملک 1924ء کو گجرات، برطانوی ہندوستان (موجودہ پاکستان) میں پیدا ہوئے[1][2]۔ انہوں نے تمام عمر پولیس کے محکمے میں گزاری۔ انہوں نے موسیقی کے موضوع پر کئی بے حد اہم کتابیں تحریر کیں جن میں امیر خسرو کا علم موسیقی اور دوسرے مقالات، موسیقی کے فارسی مآخذ، مسائل موسیقی اور راگ درپن شامل ہیں۔ اس کے علاوہ انہوں نے جرائم اور مجرم اور انڈالوجی کے نام سے بھی دو کتابیں تحریر کیں۔ انہوں نے پرکاش پنڈت کی دو کتابیں پنجابی سنچری اور بیانڈ پنجاب کے اردو تراجم پنجاب کے سو سال اور بیرون پنجاب کے نام سے کئے۔[1]

تصانیف[ترمیم]

  • امیر خسرو کا علم موسیقی اور دوسرے مقالات
  • موسیقی کے فارسی مآخذ
  • مسائل موسیقی اور راگ درپن
  • جرائم اور مجرم
  • انڈالوجی
  • پنجاب کے سو سال (ترجمہ)
  • بیرون پنجاب (ترجمہ)

اعزازات[ترمیم]

حکومت پاکستان نے رشید ملک کی خدمات کے اعتراف کے طور پر 14 اگست، 2007ء میں انہیں بعد از مرگ صدارتی تمغا برائے حسن کارکردگی کا اعزاز عطا کیا۔[1]

وفات[ترمیم]

رشید ملک 20 فروری، 2007ء کو لاہور، پاکستان میں وفات پا گئے۔وہ لاہور میں گلبرگ کے قبرستان میں سپردِ خاک ہیں۔[1][2]

حوالہ جات[ترمیم]