عطاء اللہ خان عیسیٰ خیلوی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

{{Infobox musical artist |name = عطاء اللہ خان عیسی خیلوی |background = گلوکار |image = Attaullah Khan Esakhailvi.JPG |birth_name = عطاء اللہ خان عیسی خیلوی |origin = پنجاب، پاکستان |birth_date= 19 اگست 1951(1951-08-19)ء |birth_place=میانوالی |genre = سرائیکی موسیقی، پنجابی موسیقی |occupation = سرائیکی، جھمر، پنجابی |years_active = 1971ء - 2019ء |death_date= 4 اپریل 1951(1951-04-04)ء

عطاء اللہ خان عیسی خیلوی جنہیں لالا بھی کہا جاتا ہے۔ عِيسىٰ خيل، میانوالی سے تعلق رکھنے والے تمغا حسن کارکردگی حاصل کرنے والے پاکستانی گلوکار ہیں۔[1] انہیں روایتی طور پر ایک سرائیکی فنکار سمجھا جاتا ہے، لیکن ان کی موسیقی کے البمز پنجابی یا اردو میں ہیں۔ ان کا شہرہ آفاق گیت چن کتہاں گزاری ای رات وے آج بھی ذوق و شوق سے سنا جاتا ہے۔ انہوں نے پاکستانی فلم دل لگی میں کام کیا لیکن ان کی پہنچان سرائیکی گیت ہیں۔ فلم سے زیادہ ان کا گیت دل لگایا تھا دل لگی کےلیے زیادہ کامیاب رہا۔ فلم کے ناکام تجربے کے بعد انہوں نے اپنی توجہ گیتوں پر مرکوز کی۔ آکھے واہ بلوچا بے پروا بلوچ گیت نے انہیں شہرت کے آسمان پر پہنچا دیا۔ ان کے عروج کے زمانے میںریڈیو ملتان پر سامعین سب سے زیادہ ان کے گیتوں کی فرمائش کرتے تھے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Atta Ullah Eesakhelvi and the Cassette Revolution"۔ Pakistaniat۔ مورخہ 25 اپریل 2011 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 اپریل 2011۔