"حفصہ بنت عمر" کے نسخوں کے درمیان فرق

Jump to navigation Jump to search
کوئی ترمیمی خلاصہ نہیں
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم)
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم)
 
== وفات ==
حفصہ نے شعبان سن 45 ہجری میں مدینہ میں انتقال کیا، یہ [[معاویہ بن ابی سفیان|مُعاویہ]] کی ملوکیت کا زمانہ تھا۔ مروان نے جو اس وقت مدینہ کا گورنر تھا، نماز جنازہ پڑھائی اور کچھ دور تک جنازہ کو کندھا دیا، اس کے بعد [[ابو ہریرہ]] جنازہ کو قبر تک لے گئے، ان کے بھائی عبد اللہ بن عمر اور ان کے لڑکوں عاصم، سالم، عبد اللہ اور حمزہ نے قبر میں اتارا۔
 
ام المومنین حفصہ کے سنہ وفات میں اختلاف ہے، ایک روایت ہے کہ جمادی الاول سنہ 41 ہجری میں وفات پائی، اس وقت ان کا سن 59 سال کا تھا۔ لیکن اگر سنہ وفات 45 ہجری قرار دیا جائے۔ تو ان کی عمر 63 سال کی ہو گی، ایک روایت ہے کہ انہوں نے عثمان کی خلافت میں انتقال کیا، یہ روایت اس بنا پر پیدا ہو گئی کہ وہب نے ابن مالک سے روایت کی ہے جس سال افریقا فتح ہوا، حفصہ نے اسی سال وفات پائی اور افریقا عثمان کی خلافت میں سنہ 27 ہجری میں فتح ہوا۔ لیکن یہ سخت غلطی ہے۔ افریقا دو مرتبہ فتح ہوا۔ اس دوسری فتح کا فخر معاویہ کو حاصل ہے، جنہوں نے معاویہ کے عہد میں حملہ کیا تھا۔ حفصہ نے وفات کے وقت عبد اللہ بن عمر کو بلا کر وصیت کی اور غابہ میں جو جائداد تھی جسے عمر ان کی نگرانی میں دے گئے تھے، اس کو صدقہ کر کے وقف کر دیا۔<ref>زرقانی ج3 ص271</ref>

فہرست رہنمائی