حسن ابن علی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(حسن بن علی سے رجوع مکرر)
Jump to navigation Jump to search
حسن ابن علی
(عربی میں: الحسن بن علي ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
الحسن ابن علي.svg
 

پانچویں خلیفہ راشد
Fleche-defaut-droite-gris-32.png علی بن ابی طالب
معاویہ
(بطور بادشاہ اولِ دولت امویہ)
Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
اہل تشیع کے دوسرے امام
Fleche-defaut-droite-gris-32.png علی بن ابی طالب
حسین بن علی Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 1 مارچ 624  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدینہ منورہ[1]  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات سنہ 669 (44–45 سال)[2][3]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدینہ منورہ  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وجہ وفات زہر  ویکی ڈیٹا پر (P509) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدفن جنت البقیع  ویکی ڈیٹا پر (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
طرز وفات قتل  ویکی ڈیٹا پر (P1196) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Black flag.svg خلافت راشدہ
Umayyad Flag.svg سلطنت امویہ  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
زوجہ
اولاد قاسم بن حسن،  فاطمہ بنت حسن،  ابو بکر بن حسن بن علی،  طلحہ بن حسن،  حسین بن حسن بن علی،  زید بن حسن،  حسن المثنیٰ  ویکی ڈیٹا پر (P40) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والد علی بن ابی طالب  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والدہ فاطمۃ الزھراء  ویکی ڈیٹا پر (P25) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بہن/بھائی
عملی زندگی
پیشہ ریاست کار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان کلاسیکی عربی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

حسن بن علی بن ابی طالب (624ء–670ء) علی بن ابی طالب اور محمد Mohamed peace be upon him.svg کی دختر فاطمہ زہرا کے سب سے بڑے بیٹے اور حسین بن علی کے بڑے بھائی تھے۔ اہل اسلام ان کا پیغمبر اسلام Mohamed peace be upon him.svg کے پوتے کے طور پر احترام کرتے ہیں۔ سنی مسلمان ان کو پانچواں خلیفہ راشد[8][9][10] جبکہ شیعہ مسلمان حسن کو دوسرا امام مانتے ہیں۔ ان کے والد کی وفات کے بعد انہیں خلافت کے لیے منتخب کیا گیا لیکن چھ یا سات ماہ کے بعد معاویہ کے سپرد کر دی، اور معاویہ کے دور میں خلافت ملوکیت میں بدل گئی اور وہ دولت امویہ کے بانی قرار پائے،[11][12] یوں پہلے فتنے کا خاتمہ ہوا۔[13] حسن غریبوں کو عطیہ کرنے، غریبوں اور غلاموں پر اپنی شفقت اور اپنے علم، تاب آوری اور بہادری کے لیے جانے جاتے تھے۔[14] اپنی باقی زندگی حسن نے مدینہ منورہ میں ہی گزاری، یہاں تک کہ 45 سال کی عمر میں ان کا انتقال ہو گیا اور مدینہ منورہ کے جنت البقیع قبرستان میں سپرد خاک ہوگئے۔ عموماً ان کی زوجہ جعدہ بنت اشعث پر انہیں زہر دینے کا الزام لگایا جاتا ہے۔[11][12][15][16][17][18]

حوالہ جات

  1. اشاعت گیارہ
  2. جی این ڈی- آئی ڈی: https://d-nb.info/gnd/118901494 — اخذ شدہ بتاریخ: 15 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: CC0
  3. British Museum person or institution ID: https://collection.britishmuseum.org/resource/?uri=http%3A%2F%2Fcollection.britishmuseum.org%2Fid%2Fperson-institution%2F10501 — بنام: Hassan — خالق: برٹش میوزیم
  4. Shabbar، S.M.R. (1997). Story of the Holy Ka'aba. Muhammadi Trust of Great Britain. 30 اکتوبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 30 اکتوبر 2013. 
  5. Shaykh Mufid. Kitab Al Irshad. p.279-289 آرکائیو شدہ 27 دسمبر 2008 بذریعہ وے بیک مشین.
  6. Hasan b. 'Ali b. Abi Taleb آرکائیو شدہ 1 جنوری 2014 بذریعہ وے بیک مشین, دائرۃ المعارف ایرانیکا.
  7. سیوطی، جلال الدین (1881). تاریخ الخلفاء. 31 جولا‎ئی 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 جولا‎ئی 2018. 
  8. الصلابي، علي محمد (8 اپریل 2004). "سيرة أمير المؤمنين خامس الخلفاء الراشدين الحسن بن علي بن أبي طالب رضي الله عنهما، شخصيته وعصره". دار المعرفة للطباعة والنشر – Google Books سے. 
  9. فريد، أحمد. "من أعلام السلف - ج 1". IslamKotob – Google Books سے. 
  10. كهوس، أبو اليسر رشيد (1 January 2013). محاضرات في سيرة الخلفاء الراشدين رضي الله تعالى عنهم. Al Manhal. ISBN 9796500177762 – Google Books سے. 
  11. ^ ا ب Donaldson، Dwight M. (1933). The Shi'ite Religion: A History of Islam in Persia and Irak (PDF). Burleigh Press. صفحات 66–78. 
  12. ^ ا ب Jafri، Syed Husain Mohammad (2002). "Chapter 6". The Origins and Early Development of Shi'a Islam. Oxford University Press. ISBN 978-0195793871. 
  13. Ayati، Dr. Ibrahim (2013-11-14). "A Probe into the History of Ashura'". Al-Islam.org. Ahlul Bayt Digital Islamic Library Project. 
  14. Baghdad history 34/6, tahzib-al-tahzib 298/2, al-bidaya-va-al-nihaya 42/8".
  15. Madelung 1997.
  16. Tabåatabåa'åi، Muhammad Husayn (1981). A Shi'ite Anthology. Selected and with a Foreword by Muhammad Husayn Tabataba'i; Translated with Explanatory Notes by William Chittick; Under the Direction of and with an Introduction by Hossein Nasr. State University of New York Press. صفحہ 137. ISBN 9780585078182. 
  17. Lalani، Arzina R. (9 March 2001). Early Shi'i Thought: The Teachings of Imam Muhammad Al-Baqir. I. B. Tauris. صفحہ 4. ISBN 978-1860644344.